• نومبر 24, 2020

ہم گلگت بلتستان میں تاریخ رقم کرکے دکھائیں گے،بلاول بھٹو کا دعویٰ

استوار: بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ ہم گلگت بلتستان میں تاریخ رقم کر کے دکھائیں گے، استور کا بچہ بچہ کہہ رہا ہے پیپلز پارٹی کا ساتھ دیں گے۔ چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا صدر زرداری نے 2009 میں عبوری صوبہ دے دیا تھا، آپ ابھی تک گلگت بلتستان صوبے کا سوچ رہے ہیں، عمران خان سوچ رہے ہیں گلگت بلتستان کو صوبہ بنا دیں، یہ بھی بڑی خبر ہے کہ سلیکٹڈ سوچ رہے ہیں، سلیکٹڈ کو گلگت بلتستان کے بارے میں کیا پتا۔ بلاول بھٹو کا کہنا تھا بڑے بڑے لوگوں کو ایمنسٹی دے کر معیشت ترقی نہیں کرسکتی، بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کی طرح منصوبوں سے ترقی ہوتی ہے، جو پاکستان میں ہو رہا ہے وہ آپ کے سامنے ہے، ہر طبقہ سراپا احتجاج ہے، مزدوروں سے لے کر تاجر تک احتجاج کر رہے ہیں، عوام کو تبدیلی کے نام پر تباہی سے بچانا ہے، ہم جمہوری طریقے سے اپنی مہم چلا رہے ہیں، ان کے پاس اقتدار ضرور ہے لیکن عوام ان کے ساتھ نہیں ہیں۔ چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا گلگت بلتستان کو تباہی سے بچانا ہے تو پیپلزپارٹی کا ساتھ دیں، آپ ان سے پیسہ ضرور لیں لیکن ووٹ تیر کو دیں، کٹھ پتلی وزیراعظم کو بھی الیکشن کے دنوں میں گلگت بلتستان کا خیال آجاتا ہے، سلیکٹڈ وزیراعظم کہتے ہیں الیکشن کی وجہ سے پیکج کا اعلان نہیں کر رہا، ہم آپ کو جانتے ہیں، الیکشن کے بعد بھی پیکج نہیں دیں گے، آپ نے تو میانوالی کو بھی پیکج نہیں دیا ہے، صوبہ بناؤں گا اور سبسڈی کا بھی تحفظ کروں گا۔ بلاول بھٹو نے مزید کہا یہ تو صوبہ بنانے سے پہلے ٹیکس کے نوٹیفکیشن نکال رہے ہیں۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

جلعی وزیر اعظم کا گلگت بلتستان کوصوبہ بنانے کا وعدہ جھوٹا ہے،مریم نواز

Read Next

بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس:ملک بھر کے تعلیمی ادارے کھلے رکھنے کا فیصلہ

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے