• جولائی 31, 2021

کون بنے کا بڑے ایوان کا بڑا سلطان؟ معرکہ آج سجے گا

چیئرمین سینیٹ کے انتخاب کیلئے معرکہ آج لگے گا۔ حکومتی امیدوار صادق سنجرانی اور پی ڈی ایم کے یوسف رضا گیلانی آمنے سامنے ہیں۔ خفیہ بیلٹ کے ذریعے انتخاب کیا جائے گا۔ اڑتالیس نومنتخب سینیٹرز بھی آج حلف اٹھائیں گے

سینیٹ کے چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کا انتخاب خفیہ رائے شماری سے ہوگا۔

ایوان بالا ‏کا اجلاس صبح دس بجے شروع ہوا۔ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نومنتخب 48 سینیٹرز سے حلف لیا جس کے بعد اجلاس ملتوی کر دیا گیا۔

امیدوار کاغذات ‏نامزدگی ‏جمع کروائیں گے اور پھر نماز جمعہ کے بعد چیئرمین سینیٹ اور ڈپٹی چیئرمین کا انتخاب کیا جائے گا۔

اپوزیشن کی جانب سے چیئرمین کیلئے یوسف رضا گیلانی جبکہ ڈپٹی چیئرمین کے لیے عبدالغفور حیدری کا نام تجویز کیا گیا ہے۔

حکومتی اتحاد نے چیئرمین کے لیے صادق سنجرانی اور ڈپٹی چیئرمین کے لیے مرزا محمد آفریدی کو امیدوار نامزد کیا ہے۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے چیئرمین سینیٹ کے انتخاب کے لیے سینیٹر سید مظفر حسین شاہ کو پریزائیڈنگ افسر مقرر کر دیا ہے۔

امیدواروں میں سادہ اکثریت لینے والا چیئرمین سینیٹ منتخب ہو جائے گا۔ تاہم ووٹ ‏برابر ہونے کی صورت میں الیکشن دوبارہ ہوگا۔

پریذائیڈنگ افسر نومنتخب چیئرمین ‏سینیٹ سے ‏حلف لے کر اجلاس کی صدارت حوالے کر دیں گے۔

چیئرمین سینیٹ، ڈپٹی ‏چیئرمین سینیٹ کا انتخاب کروائیں گے۔ ڈپٹی چیئرمین کی حلف برداری کے بعد حکومت ‏اوراپوزیشن سینیٹ میں قائد ایوان اورقائد حزب اختلاف نامزد کریں گے۔

اب سینیٹ میں 104 کے بجائے سینیٹ اراکین کی تعداد 100 ہوگی۔ فاٹا کے خیبر پختونخوا میں انضمام کے بعد 4 نشستیں ختم کر دی گئی ہیں۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

ایوان بالا کا سلطان اعلی۔۔ کون کب رہا

Read Next

پولنگ بوتھ سے کیمرہ نکل آیا

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے