• اکتوبر 25, 2020

کوئی بھی میئر ان وسائل کے ساتھ کام نہیں کرسکتا: وسیم اختر

میئر کراچی وسیم اختر نے چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد کے ریمارکس پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ عدالت کی مجھ پر ناراضگی درست ہے لیکن کوئی بھی میئر آجائے وہ ان وسائل سے کام نہیں کرسکتا۔ سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں  شہر میں بل بورڈ گرنے کے معاملے پر ہونے والی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے میئر کراچی وسیم اختر نے دوران سماعت چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد کے ریمارکس پر رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ میں تسلیم کرتا ہوں عدالت کی مجھ پر ناراضگی درست ہے لیکن پانی،کچرا،ٹرانسپورٹ ، ماسٹر پلان کے اختیارات میرے پاس نہیں ہے اور کوئی بھی میئر آجائے وہ ان وسائل سے کام نہیں کرسکتا انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کی کارکردگی صفر ہے، سندھ حکومت نے خود تسلیم کیا ہے کہ 70 فیصد زمین صوبےکے پاس نہیں ہے، آخر 70  فیصد کراچی کا ریونیو کہاں جاتا ہے ؟میئر کراچی وسیم اختر نے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے مزید کہا کہ صوبائی حکومت نے کراچی کا ستیاناس کردیا ہے ،میری جگہ کوئی بھی ہوتا تو وہ اس عہدے پر رہتے ہوئے مطمئن نہیں ہوسکتا انہوں نے کہا کہ میں نہیں سمجھتا کہ بلدیاتی الیکشن وقت پر ہوسکیں گے آرٹیکل140 اے کی درخواست پر ایکشن ہونا چاہیے

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

صحتیاب ہونے والے افراد پر کورونا کا کیا اثر پڑا؟نئی تحقیق سامنے آ گئی

Read Next

بیروت میں مظاہرے جاری، 2وزرا سمیت مزید5ارکان اسمبلی مستعفی

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے