• اکتوبر 19, 2021

کوئٹہ: پٹرولیم قیمتوں میں اضافے سے مرغی کے نرخوں کو بھی پر لگ گئے

کوئٹہ:  پٹرولیم منصوعات کی قیمتوں میں اضافے کے بعد کوئٹہ میں مرغی کی قیمتوں کو بھی پر لگ گئے، تین سو روپے میں بکنے والی مرغی 50 روپے اضافے کے ساتھ 350 روپے فی کلو فروخت ہونے لگی۔ عوام کو اب بھی کوئی ریلف نہ مل سکا۔

کوئٹہ میں شہری مرغی کے گوشت کا استعمال زیادہ کرتے ہیں مگر رواں سال اس کی قیمتوں میں ہر ماہ اضافہ ہی ہوتا چلا جا رہا ہے۔ دو سو سے ڈھائی سو اور ڈھائی سو سے تین سو روپے بکنے والی مرغی کی قیمت میں ایک بار پھر 50 روپے فی کلو اضافہ کر دیا گیا ہے جس کے بعد شہر بھر میں مرغی کا گوشت ساڑھے تین سوروپے فی کلو بکنے لگا ہے جس پر شہری پریشان ہیں۔

مرغی فروش کہتے ہیں کہ پٹرولیم مصنوعات مہنگا ہونے کا اثر ہر چیز پر پڑا ہے، انہیں مال مہنگا ملتا ہے جس کی وجہ سے قیمتوں میں اضافہ کر کے اپنے اضراجات پورے کرتے ہیں۔

مہنگائی کے بوجھ تلے دبے شہری گلہ کرتے ہیں کہ بکرے کا گوشت 13 سے 14 سو روپے فی کلو لینا ان کے بس کی بات نہیں جبکہ پرائس کنٹرول کمیٹی اپنی ذمہ داری پوری کرے یہ ضلعی انتظامیہ کے بس کی بات نہیں لگتی۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

ایل پی جی کی قیمت میں بھی اضافہ ، مزید 29روپے 10پیسے فی کلو مہنگی

Read Next

گلوکارہ برٹنی سپئرز کو ذاتی جائیداد کے حقوق واپس مل گئے، گارڈین شپ معطل

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے