• اکتوبر 23, 2020

کلبھوشن یادیو کیس: عدالت کا بھارت کو وکیل کرنے کیلئے پھر موقع دینے کا حکم

اسلام آباد: کلبھوشن یادیو کے لیے وکیل مقرر کرنے سے متعلق حکومتی درخواست پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے حکم دیا کہ بھارت کو وکیل کرنے کے لیے 6 اکتوبر تک موقع دیا جائے۔

سماعت کے موقع پر اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ 6 اگست کو بھارت اور کلبھوشن یادیو کو اسلام آباد ہائیکورٹ کو آگاہ کر دیا تھا، کلبھوشن یادیو نے آرڈیننس کے تحت عدالت میں درخواست دائر کرنے سے انکار کر دیا ہے، بھارت بھی کلبھوشن یادیو کو قانونی معاونت کے لیے دی گئی سہولت سے فائدہ نہیں اٹھانا چاہتا جبکہ آرڈیننس کے تحت کلبھوشن کو وکیل مقرر کرنے پیشکش کا جواب نہیں دیا۔

اٹارنی جنرل نے کہا کہ بھارت بین الاقوامی عدالت کے فیصلے پر عملدرآمد سے بھاگ رہا ہے اور ایک ماہ بعد بھی جواب نہیں دیا، میری نظر میں دو ممکنہ صورتیں ہو سکتی ہیں، عدالت کلبھوشن کے لیے وکیل مقرر کرے یا بھارتی جواب کا انتظار کیا جائے۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ اگربھارت یا کلبھوشن سہولت سے فائدہ ہی نہیں اٹھانا چاہتے تو پھر نظرثانی پٹیشن کی حیثیت کیا ہوگی ؟ نظرثانی کا معاملہ موثر ہونا چاہئے، کیا یہ مناسب نہیں ہو گا کہ فیئر ٹرائل کے اصولوں کے تحت بھارت کو دوبارہ پیشکش کی جائے۔

عدالت نے بھارت کو 6 اکتوبر تک مہلت دیتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

نوازشریف واپس نہیں آتے تو شہباز شریف کو جواب دینا پڑے گا: علی محمد خان

Read Next

وزیراعظم کے دورہ کراچی کے شیڈول میں تبدیلی، ہفتے کو کراچی جائیں گے

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے