• جولائی 31, 2021

ڈسکہ کے ضمنی انتخابات کا معاملہ، الیکشن کمیشن کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج

پاکستان تحریک انصاف نے این اے 75 ڈسکہ کے ضمنی انتخابات کے معاملے پر الیکشن کمیشن کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا۔

پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار علی اسجد ملہی نے درخواست میں نوشین افتخار اور دیگر کو فریق بنایا۔ درخواست گزار نے موقف اپنایا کہ الیکشن کمیشن نے قواعد و ضوابط کو بالائے طاق رکھ کر فیصلہ دیا، ای سی پی کا فیصلہ آرٹیکل 10 اے کی خلاف ورزی ہے، عدالت سے استدعا ہے کہ فیصلہ کالعدم قرار دے کر نتائج کے اعلان کا حکم دیا جائے۔

یاد رہے الیکشن کمیشن نے این اے 75 کے انتخاب کو کالعدم قرار دیتے ہوئے پورے حلقے میں دوبارہ الیکش کرانے کا حکم دیا تھا۔ چیف الیکشن کمشنر کا کہنا تھا کہ ضمنی انتخاب شفاف انداز میں نہیں ہوئے، خوف و ہراس پھیلایا گیا، لا اینڈ آرڈر بھی ٹھیک نہ تھا، این اے 75 ڈسکہ میں دوبارہ انتخاب 18 مارچ کو ہوگا

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

ایوان کو اعتمادنہ رہا تو اپوزیشن میں بیٹھ جاؤں گا: وزیراعظم عمران خان

Read Next

وزیراعظم کے الزامات الیکشن کمیشن نے مسترد کردیئے

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے