• مئی 24, 2022

پیوٹن نے یوکرین کے دو علاقوں کو آزاد ریاست تسلیم کرنے کے حکمنامے پر دستخط کردیے

روس اور یوکرین کے درمیان ہر گزرتے دن کے ساتھ کشیدگی میں اضافہ ہوتا جارہا ہے اور اب روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے مشرقی یوکرین کے دو علیحدگی پسند علاقوں کو آزاد ریاست کے طور پر تسلیم کرنے کے انتظامی آرڈر پر دستخط کردیے ہیں۔

آخر میں پیوٹن نے اعلان کیا کہ انہوں نے یوکرین کے دو علاقوں کو آزاد ریاستوں کے طور پر تسلیم کرنے کے حکم نامے پر دستخط کردیے ہیں اور روسی پارلیمنٹ سے کہا ہے کہ وہ جلد از جلد اس کی توثیق کرے۔

پیوٹن نے اپنے خطاب کے اختتام پر کہا کہ ’مجھے امید ہے کہ روسی عوام کی حمایت حاصل ہوگی۔‘

قبل ازیں روسی حکومت کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ پیوٹن نے ٹیلی فون کے ذریعے فرانس اور جرمنی کو اس بات سے آگاہ کردیا ہے کہ وہ مشرقی یوکرین کے دو علاقوں دونیتسک اور لوہانسک کو آزاد ریاستوں کے طور پر تسلیم کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں اور اس حوالے سے جلد انتظامی آرڈر پر دستخط بھی کریں گے۔

خیال رہے کہ روس کی جانب سے علیحدگی پسند علاقوں کو آزاد ریاست تسلیم کیے جانے کے بعد روسی فوج کے دستے ان علاقوں میں داخل ہوسکیں  گے جس سے معاملے کو سلجھانے کے سفارتی دروازے بند ہوجائیں گے اور جنگ کا امکان بڑھ جائے گا۔

2014 میں منسک معاہدے کی وجہ سے یوکرین اور روس کے درمیان جنگ بندی ہوئی تھی جس میں فرانس اور جرمنی نے ثالثی کی تھی۔

واضح رہے کہ لوہانسک اور دونیتسک یوکرین سے علیحدگی کے خواہش مند ہیں اور یہاں روس کے حمایت یافتہ علیحدگی پسندوں کا کنٹرول ہے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

شاہین کی جارحانہ بیٹنگ،آفریدی بھی تعریف کرنے پر مجبور

Read Next

میشا شفیع کی آنکھ مچولی سے ٹرائل متاثر ہورہا ہے: عدالت

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے