• مئی 26, 2022

ویڈیو: پشاور دھماکے کے عینی شاہد نے آنکھوں دیکھا حال بتادیا

پشاور: قصہ خوانی بازار کی کوچہ رسالدار مسجد میں دھماکے سے اب تک 30 افراد کے شہید ہونے کی تصدیق ہوئی ہے۔

پولیس  نے مسجد میں ہونے والے دھماکےکے خودکش ہونے کی تصدیق کی ہے۔

جائے وقوعہ پر موجود عینی شاہد نے جیو نیوز کو بتایا کہ  کالے لباس میں ملبوس خودکش حملہ آور نے پہلے سکیورٹی اہلکاروں پر 5 سے 6 فائر کیے اور پھر تیزی سے مسجد کے اندر داخل ہوا اور خود کو اڑا دیا۔

عینی شاہد نے کہا کہ خودکش حملہ آور نے خود کو منبر کےسامنے اڑایا اور دھماکے کے بعد مسجد کے ہال میں ہر طرف انسانی اعضا پھیل گئے۔

عینی  شاہد کا کہنا تھا کہ مسجد کے ہال میں 12 لاشیں دیکھیں، لاتعداد زخمیوں کو اسپتال  پہنچایا،  دھماکے کے وقت پورا ہال بھرا ہوا تھا،  یہ واقعہ تقریباً 12 بجکر 55 منٹ پر پیش آیا اس وقت مسجد پوری بھری ہوئی تھی۔

انہوں نے مزید  بتایا کہ اسی علاقے میں چار روز پہلے بھی ایک گھر پر دستی بم حملہ ہوا تھا جس پر  ہم نے سکیورٹی بڑھانے کا کہا تھا لیکن  سکیورٹی کا کوئی نام و نشان نہیں،  جمعہ کے روز بھی کوئی سکیورٹی نہیں ہوتی۔

عینی شاہد کا کہنا تھاکہ ریسکیو ٹیمیں دیر سے پہنچیں، زخمیوں کو موٹر سائیکلوں پر اسپتال  پہنچایا، تنگ  گلیوں کی وجہ سے امدادی کارروائیوں  مں مشکلات  کا سامنا تھا۔

Read Previous

پشاور دھماکا سازش کے تحت پاکستان کو غیرمستحکم کرنےکی کوشش ہے: وزیر داخلہ

Read Next

وزیراعظم، وزیراعلیٰ کے پی اور اپوزیشن رہنماؤں کی پشاور دھماکے کی شدید مذمت

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔