• اپریل 18, 2021

وہ آبی مخلوق جو خوف ناک ہی نہیں‌ ‘دھوکے باز’ بھی ہے

روئے زمین پر موجود قسم ہر قسم کی جنگلی حیات دانہ دنکا، اناج، سبزہ اور مختلف چھوٹے حشرات، کیڑے مکوڑوں یا نباتات ہی سے اپنا پیٹ نہیں بھرتی بلکہ ان میں درندے اور ایسے بڑے جانور بھی شامل ہیں‌ جو گوشت خور ہوتے ہیں اور شکار کرکے کھاتے ہیں۔ شیر جیسے درندے کی بات کی جائے تو یہ کھلے میدان میں پھرنے والے ہرن، زرافہ، گائے، بھیڑ اور مختلف جانوروں کا شکار کرکے اپنی بھوک مٹاتا ہے، لیکن بعض چوپائے بہروپ بھر کے اور دھوکے سے شکار کو اپنی جانب متوجہ کرتے ہیں اور موقع پاتے ہی اسے ہڑپ کرجاتے ہیں۔ اسی طرح آبی مخلوقات میں مچھلیوں کی کئی اقسام ایسی ہیں‌ جنھیں‌ آپ ‘دھوکے باز’ کہہ سکتے ہیں۔ زیرِ آب بڑے چھوٹے کیڑے مکوڑوں یا مچھلیوں اور دوسری آبی مخلوقات سے اپنا پیٹ بھرنے کے لیے انھیں‌ دھوکے سے اپنے قریب بلانے میں‌ بنسی باز مچھلی (Angler Fish) مشہور ہے۔ اینگلر فش کے سَر پر ٹھیک آنکھوں کے اوپر ایک قدرے لمبا چھڑی نما عضو لہراتا رہتا ہے جس کا سِرا گوشت کے چھوٹے سے لوتھڑے سے مشابہ ہوتا ہے۔ یہ چھڑی نما عضو چاروں طرف حرکت کرسکتا ہے اور اس کے سرے پر موجود گوشت کا لوتھڑا دور سے چھوٹا سا قابلِ شکار جانور دکھائی دیتا ہے۔ یہ مچھلی اپنے اسی عضو کی مدد سے دھوکا دے کر دوسرے شکاری جانوروں کو قریب آنے پر مجبور کرتی ہے۔ جب بنسی باز مچھلی کو بھوک ستاتی ہے تو وہ مخصوص طریقے سے اپنے اس عضو کو حرکت دینے لگتی ہے اور دوسری چھوٹی آبی مخلوق اس گوشت کے لوتھڑے کو چھوٹا شکار سمجھ کر جیسے ہی قریب آتی ہے، اس ‘دھوکے باز’ کا خوف ناک منہ کھلتا ہے اور اپنی بھوک مٹانے کے لیے آنے والا خود اس مچھلی کا کا نوالہ بن جاتا ہے۔ اس مچھلی کی مختلف اقسام ہیں جو دنیا بھر میں پائی جاتی ہیں۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

آکسفورڈ کی کرونا وائرس ویکسین کس طرح استعمال کی جائے گی؟

Read Next

گلگت بلتستان؛ سیاحوں کے داخلے پر 5 ماہ سے عائد پابندی ختم

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے