• اکتوبر 30, 2020

وفاق کراچی کو بچانے کیلئے مختلف قانونی اور آئینی آپشن سوچ رہا ہے: اٹارنی جنرل

کراچی،سپریم کورٹ میں اٹارنی جنرل نے بیان دیتے ہوئے کہا کراچی اس وقت ایک یتیم شہر بنا ہوا ہے، اگر کراچی تباہ ہوا تو پاکستان تباہ ہوگا، وفاق کراچی کو بچانے کیلئے مختلف قانونی اور آئینی آپشن سوچ رہا ہے، یہ بتانے کی پوزیشن میں نہیں کیا اقدامات ہو سکتے ہیں۔

سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں شہر قائد میں تجاوزات سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس گلزار احمد نے کہا آپ نے کراچی سے کشمور تک کچھ نہیں کیا، پورا کراچی اب گو ٹھ بن چکا ہے، شہر میں گٹر کا پانی بھرا ہے، مچھر، مکھیوں کی بھرمار ہے، کہیں قانون کی عمل داری نظر نہیں آ رہی ہے، سندھ حکومت لوگوں کو اس حال میں دیکھ کر انجوائے کر رہی ہے۔

ایڈووکیٹ جنرل سندھ نے عدالت کو یقین دہانی کراتے ہوئے کہا دو ماہ میں تجاوزات کا خاتمہ کر دیں گے۔ سپریم کورٹ نے کراچی میں نالوں کے اطراف سے تجاوزات فوری ختم کرنے کا حکم دیتے ہوئے این ڈی ایم اے کو تین ماہ میں سپریم کورٹ میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کر دی۔ چیف جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیئے کہ سندھ حکومت کام کرر ہی ہے نہ لوکل باڈی۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

بریکنگ نیوز:سپریم کورٹ نے شہر کے تمام نالوں کی صفائی کا کام این ڈی ایم اے کو دینے کا حکم دے دیا۔

Read Next

نیب نے خواجہ برادران کی ضمانت کے فیصلے پر نظرثانی درخواست دائر کر دی

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے