• مارچ 5, 2021

نیند کی کمی بھوک میں اضافے کا سبب

اسمارٹ فون کے بے تحاشہ استعمال نے لوگوں سے راتوں کی نیند چھین لی ہے اور انہیں بے خوابی کا مریض بنا دیا ہے، ایک رات کی نیند پوری نہ ہونے سے انسان کی بھوک میں 45 فیصد اضافہ ہوسکتا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ہر بالغ انسان کے لیے روزانہ 7 سے 8 گھنٹے کی نیند کرنا ضروری ہے، اس سے بھوک اور پیاس کو کنٹرول کرنے کے ہارمونز کا نظام بھی ٹھیک رہتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق ایک رات کی نیند پوری نہ ہونے سے اگلے دن آپ کو اپنی بھوک میں 45 فیصد اضافہ محسوس ہوسکتا ہے۔ ماہرین کے مطابق نیند پوری نہ ہونے سے سب سے پہلا اثر آپ کی جسمانی توانائی اور دماغی کارکردگی پر پڑتا ہے۔ نیند کی کمی سے آپ سارا دن تھکن اور سستی کا شکار رہتے ہیں اور اپنے کام ٹھیک طرح سے انجام نہیں دے سکتے۔ نیند کی کمی کسی انسان کو بدمزاج اور چڑچڑا بھی بنا سکتی ہے۔ طویل عرصے تک نیند کی کمی کا شکار رہنے والے افراد موٹاپے، ڈپریشن، ذیابیطس، ذہنی دباؤ اور امراض قلب کا شکار ہوجاتے ہیں۔ نیند کی کمی بلڈ پریشر میں اضافہ کرتی ہے اور آپ کو ہائی بلڈ پریشر کا مریض بنا سکتی ہے جبکہ نیند کی کمی سے جسم میں کولیسٹرول کی سطح میں بھی اضافہ ہوسکتا ہے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

پاکستان میں کینسر کی شرح میں خطرناک اضافہ

Read Next

انسان کا موڈ اور کیفیت بتانے والی ’سلیکون پٹی‘

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے