• نومبر 1, 2020

نیشنل پارٹی کے سربراہ میر حاصل بزنجو انتقال کر گئے

کراچی: نیشنل پارٹی کے سربراہ میر حاصل بزنجو انتقال کرگئے، وہ پھیھپڑوں کے کینسر میں مبتلا تھے۔ ترجمان نیشنل پارٹی جان بلیدی نے میر حاصل بزنجو کے انتقال کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ میر حاصل بزنجو پھیھپڑوں کے کینسر میں مبتلا تھے۔ ترجمان جان بلیدی کا کہنا تھا کہ حاصل بزنجو کو طبیعت خرابی پر اسپتال منتقل کیا گیا لیکن وہ جانبر نہ ہوسکے۔ ترجمان نیشنل پارٹی کا کہنا ہے کہ حاصل بزنجو کی نماز جنازہ خضدار کے علاقے نال میں ادا کی جائے گی۔ میر حاصل بزنجو سابق گورنر بلوچستان میر غوث بخش بزنجو کے صاحبزادے تھے، انہوں نے 70 کی دہائی میں بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن سے سیاست کا آغاز کیا۔ میر حاصل بزنجو نے 1988 میں نیشنل پارٹی میں شمولیت اختیار کی اور نال سے انتخابات میں حصہ لیا، وہ 1989 میں پاکستان نیشنل پارٹی کی سرگرمیوں میں زیادہ فعال رہے۔ انہوں نے 1990 میں انتخابات میں حصہ لیا اور پہلی مرتبہ قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے، میر حاصل بزنجو 1996 میں پاکستان نیشنل پارٹی کے صدر منتخب ہوئے، 1997 کے انتخابات میں وہ دوسری بار اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے۔ مشرف دور میں حکومت کے خلاف تقریر کرنے پر حاصل بزنجو کو قید کاٹنا پڑی، 2002 میں حاصل بزنجو کی پارٹی اور بلوچ نیشنل موومنٹ کا الحاق ہوا، وہ پارٹی کے پہلے کنونشن میں جنرل سیکریٹری منتخب ہوئے۔ میر حاصل بزنجو پارٹی کے دوسرے کنونشن میں سینئر نائب صدر منتخب ہوئے، وہ 2009 میں بلوچستان سے سینیٹر بھی منتخب ہوئے تھے۔ 2013ء میں مسلم لیگ (ن) کی مدد سے بلوچستان میں نیشنل پارٹی اقتدار میں آئی اور یوں اس کی قیادت نے قومی توجہ حاصل کی، میر حاصل بزنجو 2014ء میں اس کے صدر بنے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

انشا اللہ جلد کشمیر آزاد ہوگا، ہندوتوا کا نظریہ مزید نہیں چلے گا، صدر عارف علوی

Read Next

A1tv I Regional News Bulletin |08 PM |20 August 2020

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے