• اکتوبر 31, 2020

نیب کی بڑی عید پر بڑی کارروائی،شریف گروپ کے (سی ایف او) کوگرفتارکرلیا

لاہور: قومی احتساب بیورو (نیب) نے شریف گروپ کے چیف فنانشل آفیسر (سی ایف او) محمد عثمان کو گرفتار کر لیا۔

نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ محمد عثمان کو شریف خاندان کے خلاف مبینہ منی لانڈرنگ کیس میں پکڑا گیا ہے تاہم سرکاری سطح محمد عثمان کی گرفتاری کی تصدیق نہیں کی گئی ہے۔

محمد عثمان کے خلاف نیب کے پاس اہم ثبوت ہیں، وہ شریف خاندان کے اکاؤنٹس مینج کیا کرتے تھے اور ان پر منی لانڈرنگ میں ملوث ہونے کا الزام ہے۔

دوسری جانب مسلم لیگ ن کے رہنما عطا تارڑ نے الزام لگایا ہے کہ محمد عثمان کو خفیہ مقام پر منتقل کر کے حبس بےجا میں رکھا گیا ہے۔

محمد عثمان کے بھائی نے ان کی بازیابی کے لیے تھانہ سمن آباد میں درخواست بھی دے دی ہے۔

احتساب عدالت میں آج  شریف گروپ آف کمپنیزکے سی ایف او محمد عثمان کی درخواست پر سماعت ہوئی جس میں نیب پراسکیوٹر وارث علی جنجوعہ نے دلائل دیے۔

نیب پراسکیوٹر نے بتایا کہ محمد عثمان کی گرفتاری ٹھوس شوائد پرکی گئی ہے، وہ شریف فیملیز کے خلاف منی لانڈرنگ کے لیے کام کرتا رہا اور انہیں گرفتار ملزمان کے بیانات کی روشنی میں محمد عثمان کو گرفتار کیا ہے۔

دلائل سننے کے بعد احتساب عدالت نے محمد عثمان کو 17 اگست تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

احتیاطی تدابیر کے ساتھ حج کی آخری رسومات ادا کی گئیں

Read Next

اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کیخلاف مظاہرے شدت اختیار کر گئے، استعفے کا مطالبہ

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے