• ستمبر 23, 2021

موٹروے پولیس کا بڑا فیصلہ، گیس سلنڈر والی تمام گاڑیوں پر پابندی عائد

لاہور:  موٹروے پولیس نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے گیس سلنڈر والی گاڑیوں کے اہم شاہراہوں پر چلنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔

اس کے علاوہ تمام کمرشل گاڑیوں میں سے گیس سلنڈر ہٹانے کا بھی حکم دیدیا گیا ہے۔ گاڑیوں میں سی این جی کیساتھ ساتھ ایل پی جی سلنڈر پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

حکام کی جانب سے فیصلہ کیا گیا ہے کہ گیس سلنڈر نہ اتارنے والے گاڑی مالکان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ آئی جی موٹرویز کا کہنا ہے کہ انسانی زندگیوں کو بچانا ہم سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے۔ غیر قانونی اقدامات سے انسانی زندگیوں کو داؤ پر نہیں لگایا جا سکتا۔

دوسری جانب سی این جی ایسوسی ایشن نے اس فیصلے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ موٹروے پولیس سی این جی کا کاروبار بند نہیں کر سکتی، یہ غیر قانونی اقدام ہے۔ غیاث پراچہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ سی این جی پوری دنیا میں انتہائی محفوظ فیول ہے۔ پچھلے 25 سالوں میں پاکستان میں سی این جی کا ایک بھی سلنڈر نہیں پھٹا۔

ان کا کہنا تھا کہ ایل پی جی کے گاڑیوں میں استعمال کو روکنے پر ناکامی پر ادارے سی این جی سیکٹر پر ایکشن لیتے ہیں۔ جانوں کے نقصان کو روکنے میں ناکامی پر ادارے غیر ضروری طور پر اربوں روپے کے سی این جی انڈسٹری کی تباہی کے ذمہ دار نہ بنیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں گوجرانوالہ میں مسافر وین کاسلنڈر پھٹنے سے 9 مسافر جھلس کر جاں بحق ہو گئے تھے۔

حادثے کی اطلاع ملتے ہی ریسکیو کی ٹیمیں موقع پر پہنچیں اور امدادی کارروائیاں شروع کرتے ہوئے مسافر وین کی آگ بجھانے کی کوشش کی۔

امدادی اہلکاروں کا کہنا ہے کہ دھماکا اس قدر شدید تھا کہ ویگن میں بیٹھے مسافروں کو باہر نکلنے کا موقع ہی نہیں ملا، وہ اپنی نشستوں پر بیٹھے بیٹھے لقمہ اجل بن گئے۔

ریسکیو ٹیموں نے مسافروں کو شدید زخمی حالت میں ہسپتال منتقل کر دیا ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے گوجرانوالہ میں وین آتشزدگی سے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کمشنر گوجرانوالہ ڈویژن اور آ رپی او سے رپورٹ طلب کی تھی۔

انہوں نے وین میں آتشزدگی کے واقعہ کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے کہا تھا کہ انھیں فوری طور پر جامع تحقیقات کرکے رپورٹ پیش کی جائے۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے جاں بحق مسافروں کے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے زخمیوں کو علاج معالجے کی بہترین سہولتیں فراہم کرنے کی ہدایت بھی کی۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

کورونا کا زور: مزید 81 افراد جان سے گئے، 24 گھنٹے میں 4856 نئے مریض

Read Next

کوئٹہ دہشتگردی کی لپیٹ میں، 3 روز میں چوتھا دھماکا

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے