• مئی 26, 2022

مسافر ٹرین کی صفائی اور دھلائی کے دلچسپ مراحل

ٹرین کا سفر آرام دہ تصور کیا جاتا ہے۔ ٹرین اگر صاف ہو تو سفر کرنے کا مزہ بھی آتا ہے۔ٹرینوں کی صفائی پر مامور اہلکار یہ کام بہت محنت سے کرتے ہیں  تاہم انھیں لوگوں کی منفی عادات کا شکوہ بھی ہے۔

ٹرینوں کی صفائی کا مرحلہ صبر طلب ہوتا ہے۔ واشنگ لائن میں کام بہت محنت سے کیا جاتا ہے۔

ریلوے کا مخصوص عملہ کچرا اٹھانے کے بعد ڈبوں کو دھوتا ہے اور ہرچیزصاف کرتا ہے۔

مسافروں کے اترجانے کےبعد ٹرین کے ڈبوں میں کہیں کھانے پینے کی اشیاء کے خالی پیکٹ ملتے ہیں تو کہیں بچا کھچا کھانا اور استعمال شدہ ماسک نظر آتے ہیں۔ہر سیٹ اور کونے کھُدرے کی اچھی طرح صفائی کی جاتی ہے۔

 واشنگ لائن انچارج نوازش علی نے بتایا کہ   واشنگ لائن میں ٹرین کو واش کرنے کے ساتھ الیکٹریکل اور مکینکل چیکنگ بھی کی جاتی ہے۔ کچھ خراب ہونے کی صورت میں فالٹ کو ٹریس کیا جاتا ہے اور  تمام تر لوازمات پورے کرنے کے بعد ٹرین کو سفر کے لیے روانہ کیا جاتا ہے۔

دن میں 10 ٹرینیں دھونےوالے محمد انیس نے بتایا کہ کئی مسافر گند ڈالنے کے ساتھ  ٹرین میں نصف مختلف چیزوں کو توڑ بھی دیتے ہیں جن کی دوبارہ مرمت کرنا پڑتی ہے۔

ٹرین کی مینٹیننس کرنے اور اس کی مکمل صفائی میں تقریباً 30 اہلکار حصہ لیتے ہیں۔

ٹرین کے روانہ ہونے سے مینٹینینس اور صاف ستھرائی کو یقینی بنایا جاتا ہے تاکہ مسافروں کا سفر محفوظ اور آرام دہ ہو سکے

Read Previous

پاکستان میں چینی پھل کمکاٹ کی کاشت کا کامیاب تجربہ

Read Next

قندیل بلوچ قتل کیس،مرکزی ملزم بری

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔