• جنوری 28, 2022

مجھے بلیک میل مت کرو، ووٹ نہیں دینا تو مت دو: وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے پارلیمانی پارٹی اجلاس کے دوران اراکین قومی اسمبلی کو کہا ہے کہ اگر آپ مجھ سے سے مطمئن نہیں تو کسی اور کو حکومت دے دیتا ہوں۔ مجھے بلیک میل مت کرو، ووٹ نہیں دینا تو مت دو۔

تفصیلات کے مطابق منی بجٹ پر اجلاس سے قبل وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت پی ٹی آئی اور اتحادی جماعتوں کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا۔

اجلاس میں حکومتی اتحادی جماعت ایم کیو ایم پاکستان کی جانب سے ٹیکس منی بجٹ میں ترامیم پر گفتگو ہوئی۔

ایم کیو ایم کے ارکان کا کہنا تھا کہ بنیادی اشیاء ضروریہ پر ٹیکس نہ لگائیں جس پر وزیراعظم نے کہا کہ ہمیں عوام کی مشکلات کا اندازہ ہے، کوئی ایسا اضافی ٹیکس نہیں لگائیں گے جس سے عوام پر بوجھ پڑے۔

ذرائع کے مطابق اجلاس کے دوران پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی نور عالم نے بھی سخت سوالات کرتے ہوئے پوچھا کہ کیا سٹیٹ بینک کی خود مختاری سے سلامتی ادارے تو متاثر نہیں ہوں گے؟ کیا ہم سلامتی اداروں کے اکاونٹ کی تفصیلات بھی آئی ایم ایف کو دیں گے؟ کیا منی بجٹ سے ہمیں گیس پانی بجلی ملے گا؟

اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ واضح کرنا چاہتا ہوں کہ ملکی مفاد پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا، سلامتی اداروں کا تحفظ ہر صورت یقینی اور پہلی ترجیح ہے۔

اجلاس کے دوران وزیراعظم عمران خان کی پرویز خٹک بھی آمنے سامنے آئے، وزیردفاع نے پارلیمانی پارٹی اجلاس میں وزیراعظم پر بھی تنقید کی۔

پرویز خٹک کا کہنا تھا کہ آپ کو وزیراعظم ہم نے بنوایا ہے، خیبرپختونخوا میں گیس پر پابندی ہے، گیس بجلی ہم پیدا کرتے ہیں اور پس بھی ہم رہے ہیں، اگر آپ کا یہی رویہ رہا تو ہم ووٹ نہیں دے سکیں گے۔

اسی دوران وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اگر آپ مجھ سے سے مطمئن نہیں تو کسی اور کو حکومت دے دیتا ہوں۔ مجھے بلیک میل مت کرو، ووٹ نہیں دینا تو مت دو، میرے کوئی کارخانے نہیں ہیں، مجھے کوئی بلیک میل نہیں کرسکتا ،میں ملک کی جنگ لڑ رہا ہوں، مجھے کوئی حکومت کا شوق نہیں، میری جنگ ملک کے مفاد کی جنگ ہے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

آپ کو وزیراعظم ہم نے بنوایا، پرویز خٹک کی عمران خان پر شدید تنقید

Read Next

مریم نواز کی بلال یاسین کی عیادت کیلیے رہائشگاہ آمد

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے