• دسمبر 8, 2021

ماونٹ ایورسٹ سر کرنے کے دوران ساجد سد پارہ کی طبیعت خراب

 پاکستانی کے نامور کوہ پیما علی سد پارہ کے بیٹے ساجد سدپارہ کی طبیعت ماونٹ ایورسٹ کی مہم جوئی کے دوران بگڑ گئی۔

آکسیجن کی کمی کے باعث ساجد سدپارہ کی طبیعت خراب ہوئی جس پر انہیں بیس کیمپ منتقل کر دیا گیا ہے۔ساجد سد پارہ کی طبیعت خراب ہونے پر ساتھی کوہ پیماوں نے انہیں باندھ دیا جس کے بعد انہیں  بیس کیمپ منتقل کیا گیا۔

ساجد سد پارہ کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل ہو گئی ہے جس میں انہیں باندھا ہوا ہے اور پانی پلایا جا رہاہے۔ ویڈیو وائر ل ہوتے ہی ساجد سد پارہ سوشل میڈیا پرٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔

ویڈیو شیئر کرتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ ساجد سدپارہ نیپال میں سخت ذہنی دباؤ کا شکار ہیں۔ یہ بھی بتایا گیا کہ نیپالی کوہِ پیماؤں نے پاسپورٹ کے ذریعے ساجد سدپارہ کی شناخت کی اور پاکستانی قونصل خانے سے رابطہ کیا گیا۔

ساجد سد پارہ گذشتہ دس روز سے ماؤنٹ ایورسٹ سر کرنے کی مہم کے لیے نیپال میں موجود ہیں اور اس مہم میں ان کے ساتھ 70 سالہ فرانسیسی کوہ پیما مارک بیٹرڈ بھی شریک ہیں۔

الپائن کلب کے سیکرٹری کرار حیدری  کا کہنا ہے کہ ساجد سد پارہ بلندی میں آکسیجن کی کمی کے باعث بیماری کا شکار ہوئے ہیں۔

اس بیماری میں عمومی طور پر مریض ذہنی توازن کھو بیٹھتا ہے۔ اسے دوسرے شخص کو پہچانے میں دشواری ہوتی ہے جبکہ بعض اوقات پھیپھڑوں میں پانی چلے جانے کا بھی خدشہ ہوتا ہے۔

بتایا جا رہا ہے کہ اب ساجد سدپارہ کی طبیعت سنبھل گئی ہے اور وہ خطرے سے باہر ہیں۔ واضح رہے کہ  گذشتہ سال موسم سرما میں کے ٹو سر کرنے کی مہم کے دوران علی سد پارہ کے انتقال کے بعد ساجد سد پارہ کافی زیادہ ذہنی دباؤ کا شکار ہیں۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

واٹس ایپ نے اپنے صارفین کیلئے اچانک بڑی تبدیلی کردی

Read Next

Sports News | 17 November 2021 | A1 TV

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے