• اکتوبر 24, 2020

قانون ہاتھ میں لینے والوں کیخلاف سخت کارروائی ہوگی، پنجاب حکومت

لاہور: صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت نے نیب واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے کہا ہے کہ مریم نواز نے عدالتی رعایت کا غلط استعمال کیا، پتھر لانے والی کچھ گاڑیوں کی نمبر پلیٹیں جعلی تھیں، قانون ہاتھ میں لینے والوں کے خلاف سخت کارروائی ہوگی۔

مریم نواز شریف کی پیشی کے موقع پر لیگی کارکنوں اور پولیس کے درمیان ہونے والے  تصادم کا پنجاب حکومت نے نوٹس لے لیا ہے۔ اس سلسلے میں اہم پریس کانفرنس کرتے ہوئے صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت نے سارے کھیل کا ‘’ماسٹر مائنڈ’’ مریم نواز شریف کو قرار دیدیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ

مریم نواز کی نیب پیشی پر پنجاب بھر سے کارکنوں کو ساتھ لانا ایک سوچی سمجھی سکیم ہے۔ (ن) لیگ کا یہ وطیرہ رہا ہے کہ جب ان کا احتساب ہوا، انہوں نے واویلا مچایا۔

وزیر قانون راجہ بشارت کا کہنا تھا کہ (ن) لیگ، نیب اور دیگر اداروں کے خلاف زہر اگلنے کی حد پہلے ہی پار کر چکی تھیں۔ آج نیب کی کارروائی میں رکاوٹ ڈالنے کیلئے پتھراؤ بھی کر ڈالا۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس ان تمام گاڑیوں کی فوٹیجز موجود ہیں، جن سے پتھراؤ ہوا۔ ہم نے محکمہ ایکسائز سے ان گاڑیوں کی تفصیلات مانگ لی ہیں۔ پتھراؤ کرنے والی گاڑیوں اور افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ صوبائی وزیر قانون نے

واقعہ پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ لاہور کسی کی جاگیر نہیں کہ کوئی بھی اٹھے اور یہاں دہشت پھیلانا شروع کر دے۔ عدالتوں میں قافلوں کی صورت میں آنا اور اپنے جرائم پر غرور کرنا (ن) لیگ کی سیاست کا حصہ ہے۔ پنجاب حکومت کسی صورت یہ برداشت نہیں کرے گی کہ شہر میں سرکاری یا نجی املاک کو مجرموں کی وجہ سے نقصان پہنچے۔

اس موقع پر بات کرتے ہوئے صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ سب کچھ کیمرے کی آنکھ نے دیکھا۔ گزشتہ رات جاتی امرا میں دس لاکھ روپے کارکنوں میں تقسیم کیے گئے۔ پتھر مارنے والے فی کس کارکن کو پچیس ہزار جبکہ مریم نواز کی گاڑی پر پتھر مارنے والے کو ایک لاکھ دیا گیا۔ آٹھ دن کی پلاننگ کے بعد بندے اکٹھے کیے گئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ

مریم نواز چاہتی ہیں کہ ان کی تو سیاست ختم ہو گئی، اب چچا شہباز اور کزن حمزہ کی بھی ہو۔ انہوں نے ریاست اور (ن) لیگ کا سرشرم سے جھکا دیا ہے۔ دنیا میں اگر کوئی اور ہوتا تو شرم سے پریس کانفرنس نہ کرتا۔

فیاض الحسن چوہان نے مریم نواز کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کہتی ہیں کہ نقشہ بنانے سے کشمیر آزاد نہیں ہوگا، تو کیا کشمیر پاکستان کا حصہ مودی کی اماں کو ساڑھیاں بھیجنے سے بنے گا؟

ان کا کہنا تھا کہ مریم صاحبہ! آپ کے ابا جی نے بھارت جا کر حریت رہنماؤں سے ملاقات نہ کرکے پاکستان کے سینے میں خنجر گھونپا۔ سر سے پاؤں تک کرپشن، بدیانتی اور لوٹ مار کرنے والی ہمیں کشمیر پالیسی بتائیں گی؟

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

کراچی کی وراثت کے دعویدار ہی کراچی کی تباہی کے ذمہ دار ہیں،ناصر حسین شاہ

Read Next

Regional News Bulletin |08:00 PM | 11 August | 2020 | A1 Tv |

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے