• جون 22, 2021

فوجی کی ڈائری میں زیرزمین خزانے کا راز

پولینڈ کے قدیم محل کے نیچے خزانہ دفن ہونے کا انکشاف ہوا اور خزانہ تلاش کرنے والوں نے کھدائی شروع کردی ہے۔

اٹھارویں صدی عیسوی میں تعمیر کیے گئے محل پر جنگ عظِم دوم کے دوران نازی جرمن فوج کا قبضہ تھا۔

ہٹلر کی فوج نے جنگ کے خاتمے پر اس محل میں خزانہ دفن کیا تھا جس کی مالیت مبینہ طور پر5 کھرب روپے سے زائد ہے۔

خزانے کا علم نازی افسر کی ڈائری سے ملا جس کے مطابق محل میں سونے سے بھرے 48 کریٹس موجود ہیں۔ سونے کا وزن10 ٹن کے قریب ہو سکتا ہے۔

کھدائی سیلیشین برج فاؤنڈیشن کی سربراہی میں کی جا رہی ہے۔ محل کو آثار قدیمہ کا درجہ دیا گیا ہے اور کھدائی صرف ہاتھوں یا چھوٹے آلات سے کی جائے گی۔

اطلاعات ہیں کہ خزانہ چھپانے کیلئے کھدائی کرنے والے5 فرانسیسی فوجیوں کو قتل کردیا گیا تھا۔ قتل کیے گئے ان فوجیوں کے باقیات بھی ملنے کا امکان ہے۔

نازی فوج کے ایس ایس آفیسر کی ڈائری اور ایک نقشے سے خزانے کے مقام کا انکشاف ہوا۔  ڈائری سے گزشتہ سال اس خطے میں ایک اور محل کی جگہ کا انکشاف ہوا تھا جہاں سمجھا جاتا ہے کہ کنویں کے نیچے 28 ٹن خزانہ دفن ہے۔

ڈائری میں محل کے علاوہ11 مقامات کا ذکر کیا گیا ہے جہاں جنگ کے دوران زیورات اور سونے چاندی کے علاوہ دیگر قیمتی اشیا جمع کی گئی تھیں۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

سپریم کورٹ کا آکسیجن سیلنڈرز کی قیمت مقرر کرنے کا حکم

Read Next

بھوکا رہنے کی کوشش، وی لاگر ہلاک

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے