• اکتوبر 22, 2020

عوام کی فلاح بہبود اور ترقی اصلاحات پروگرام کا اہم مقصد اور ہدف ہے، مشیر خزانہ

اسلام آباد:وزیراعظم کے مشیر برائے خزانہ ومحصولات ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کراچی کونسل آن فارن ریلیشنز کے زیراہتمام ”حقیقت پسندانہ اصلاحات کے ذریعہ اقتصادی استحکام“ کے موضوع پر ویبینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے عوام کی فلاح بہبود اور ترقی حکومتی اصلاحات کے پروگرام کا اہم مقصد اور ہدف ہے۔ ڈاکٹرعبدالحفیظ شیخ نے کہا کہ جب موجودہ حکومت آئی تو اندرونی بیرونی خسارہ زیادہ تھا، برآمدات میں اضافہ پچھلے پانچ سال منفی میں تھا، ڈالر کی مصنوعی قدر کیلئے ڈالراستعمال کئے گئے۔ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 20 ارب ڈالر تھا جبکہ مالی خسارہ بھی زیادہ تھا۔ موجودہ حکومت نے مشکل فیصلے کئے۔ ان کا کہنا تھا کہ اصلاحات کے پروگرام کی حمایت کیلئے بین الاقوامی برادری اور عالمی مالیاتی اداروں جیسے آئی ایم ایف سے معاونت حاصل کی گئی۔ ایشیائی ترقیاتی بینک، عالمی بینک اور کثیر الجہتی و دو طرفہ انتظامات کے تحت اضافی بجٹ معاونت حاصل کی گئی۔ اس کے ساتھ ساتھ مشکل فیصلے کئے گئے جن میں مارکیٹ کی حقیقی صورتحال کی بنیاد پر ڈالر کی قدر کے تعین کا فیصلہ بھی شامل تھا۔ مشیر خزانہ نے کہا کہ حکومتی اخراجات میں کمی ایک اور بڑا فیصلہ تھا۔ کابینہ کی تنخواہوں میں کمی کی گئی، ایوان صدر اور وزیراعظم ہاؤس وآفس کے اخراجات میں کمی کی گئی، اسی طرح دفاعی اخراجات کو منجمد کیا گیا جبکہ پوری سول حکومت کے بجٹ میں کمی گئی۔ پورے سال میں کسی بھی وزارت کواضافی ضمنی گرانٹ نہیں دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ اخراجات کے بہتر انتظام وانصرام کے بہت اچھے نتائج دیکھنے میں آئے۔ کورونا وائرس کی وبا سے پہلے محصولات میں اضافہ کی شرح 17 فیصد تک ریکارڈ کی گئی۔ پہلی بار پرائمری بیلنس جو پہلے منفی میں جاتا تھا وہ سرپلس میں گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ملکی تاریخ میں یہ منفرد موقع ہے کہ ایک ایسا لیڈر موجود ہے جو میرٹ پرکام کررہاہے۔ پاکستان کے عوام کی فلاح بہبود اورترقی حکومتی اصلاحات کے پروگرام کا اہم مقصد اور ہدف ہے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

موسلادھار بارش سے اندرون سندھ میں تباہی، آسمانی بجلی گرنے 4 افراد جاں بحق

Read Next

ترک صدر اردوان کا ایک ہزار سال پرانے گرجا گھر کو دوبارہ مسجد بنانے کا اعلان

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے