• نومبر 30, 2020

سی پیک اتھارٹی بل اور آئین میں 26 واں ترمیمی بل قومی اسمبلی میں پیش

اسلام آباد: پاک چین اقتصادی راہداری اتھارٹی بل 2020 اور 26 واں ترمیمی بل قومی اسمبلی میں پیش کر دیا گیا۔ بل مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان نے پیش کیا۔ ڈپٹی سپیکر قاسم خان سوری نے دونوں بلز متعلقہ قائمہ کمیٹیوں کو بھجوا دیئے جبکہ قومی اسمبلی میں بل کی کاپیاں نہ دینے پر اپوزیشن اراکین نے احتجاج کیا۔ سی پیک اتھارٹی بل پر ڈپٹی سپیکر نے خواجہ آصف کو بولنے کی اجازت نہیں دی۔ قومی اسمبلی اجلاس میں تعمیر نو کمپنیز ترمیمی آرڈیننس میں مزید 120 دن کی توسیع کی قرارداد بھی کثرت رائے سے منظور کرلی گئی۔ آرڈیننسز میں توسیع کی قراردادوں کی منظوری پر جے یو آئی کی شاہدہ اختر نے احتجاج کیا۔ بابر اعوان نے کہا یہ آئین میں لکھا ہوا ہے کہ پارلیمنٹ آرڈیننس میں توسیع کرسکتی ہے، اگر آج آرڈیننس میں توسیع نہ ہوئی تو ان کی مدت ختم ہوجائے گی۔ اس سے قبل پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما نوید قمر نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ایوان کو مفلوج کیا جا رہا ہے، ایوان کا کام کسی آرڈیننس فیکٹری سے لیا جاتا اور ایوان کو شور شرابے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

اپوزیشن دشمن کے بیانیے کو تقویت دے رہی ہے،شبلی فراز

Read Next

پارلیمنٹ حملہ کیس،وزیر اعظم عمران خان باعزت بری

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے