• جنوری 19, 2022

سیالکوٹ واقعہ افسوسناک، دونوں ممالک کے تعلقات متاثر نہیں ہوں گے: سری لنکن ہائی کمشنر

اسلام آباد: سری لنکن ہائی کمشنر نے کہا ہے کہ سیالکوٹ واقعہ افسوسناک ہے، پاکستانی حکومت نے فوری ایکشن لیا، واقعے سے دونوں ممالک کے تعلقات متاثر نہیں ہوں گے، حکومت پاکستان کی اب تک کی کارروائی سے مطمئن ہیں۔

 پی ٹی آئی قیادت نے سری لنکن ہائی کمیشن جاکر سیالکوٹ واقعہ پر اظہار تعزیت کیا۔ وفد کی قیادت جنرل ریٹائرڈ خالد نعیم لودھی نے کی۔ وفد نے کہا کہ سری لنکن مینجر کے قتل کا واقعہ انتہائی افسوسناک ہے، دکھ کا اظہار الفاظ میں ممکن نہیں، پوری قوم اس واقعے کی بھرپور مذمت کرتی ہے، پوری پاکستانی قوم سری لنکن منیجر کے قتل پر رنجیدہ ہے۔

 پاکستان تحریک انصاف کے وفد نے سری لنکن حکام کو یقین دلایا کہ اس جرم میں شامل ہر ایک شخص کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے گا اور ذمہ دران کو پاکستانی قانون کے مطابق سخت سے سخت سزا دی جائے گی۔

سری لنکا کے ہائی کمشنر نے کہا کہ ملزمان کے خلاف پاکستان کی فوری کارروائی سے یقین ہے کہ متاثرہ خاندان کو انصاف ملے گا۔ پاکستان کے ساتھ ہمارے تعلقات بہترین رہے ہیں، ان پر کوئی آنچ نہیں آئے گی۔

ادھر سیالکوٹ واقعہ میں جاں بحق ہونے والے سری لنکن شہری پریانتھاکی لاش سری لنکا بھجوا دی گئی۔ لاہور ائیر پورٹ پر مشیر وزیر اعظم طاہر اشرفی اور صوبائی وزیر اقلیتی امور اعجاز عالم نے لاش کو جہاز تک پہنچایا۔ سری لنکن باشندے کی لاش سری لنکن ائیر لائن یو ایل 186 کے زریعے کولمبو روانہ کی گئی۔

لاہور ائیر پورٹ پر صوبائی وزیر برائے اقلیتی امور اعجاز عالم، سری لنکن سفارت خانے کے نمائندے، فارن آفس کے افسران اور متعلقہ ادارے کے لوگ موجود تھے۔

لاہور ائیرپورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے وزیر اعظم کے مشیر برائے مذہبی امور طاہر اشرفی نے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ زمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا، سری لنکن حکومت کو یقین دلاتے ہیں کہ انصاف کیا جائے گا۔

پولیس نے گزشتہ رات سری لنکن باشندے کی لاش سری لنکن حکام کے حوالے کر دی تھی، جو ایئرپورٹ کے کارگو سیکشن میں رکھی گئی تھی۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

کورونا کی نئی قسم اومی کرون: پاکستان آنیوالے مسافروں کیلئے ویکسی نیشن لازمی قرار

Read Next

پاک فوج کا ہیلی کاپٹر سیاچن میں گرنے سے 2 جوان شہید

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے