• اکتوبر 29, 2020

سیاسی انتقام کے حامی نہیں اور نہ ہی بغاوت کے مقدمات سے تعلق ہے،وزیر اعظم کا دو ٹوک موقف

اسلام آباد:نواز شریف اور لیگی ارکان کیخلاف ایف آئی آر کے اندراج کے معاملے پر وزیراعظم نے واضح کیا ہے کہ اس سے حکومت کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ ذرائع کے مطابق یہ اہم معاملہ وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزیراعظم کے سامنے اٹھایا گیا اور اس پر بحث کی گئی۔ وزیراعظم نے واضح اور دوٹوک موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت سیاسی انتقام کی حامی ہے نہ ہی ن لیگی رہنماؤں کیخلاف بغاوت کی ایف آئی آر سے کوئی تعلق ہے۔ذرائع کے مطابق دوران اجلاس وزیراعظم عمران خان نے بتایا کہ جب مجھے مقدمے کا علم ہوا، اس وقت میں سالگرہ کا کیک کاٹ رہا تھا۔ ذرائع کے مطابق کابینہ ارکان کی ایف آئی آر معاملے میں مداخلت نہ کرنے کی تجویز دی تاہم شیریں مزاری اور فواد چودھری سمیت کئی وزرا نے مقدمے پر مختلف رائے دی۔وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ مقدمہ بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ مقدمے سے ہماری پارٹی کو بھی نقصان پہنچ رہا ہے۔جبکہ فواد چودھری کا کہنا تھا کہ غداری جیسے مقدمات پارٹی پالیسی کیخلاف ہیں۔ ذرائع کے مطابق کابینہ اجلاس میں موجود دو وفاقی وزرا نے بغاوت کا مقدمہ ختم کرنے کی مخالفت کی۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی یورپی یونین کو پاکستان میں سرمایہ کاری کی دعوت

Read Next

سابق ڈی جی ایف آئی اے پر شریف فیملی کیخلاف کیسز بنانے کیلئے دباؤ ڈالا،مریم اورنگزیب

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے