• اکتوبر 31, 2020

سلامتی کونسل ہندوتوا گروپوں کی دہشتگردی کو نظر انداز کر رہی ہے:منیر اکرم

نیویارک: اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم نے کہا ہے کہ سلامتی کونسل مسلمانوں کے خلاف انتہا پسند اور فسطائی ہندوتوا گروپوں کی دہشتگردی کو نظر انداز کر رہی ہے۔

انہوں نے کہا گزشتہ سال کونسل کے اجلاس میں توثیق کی گئی کہ بھارت کا پانچ اگست دو ہزار انیس کا اقدام غیر قانونی ہے اور مقبوضہ علاقے کی حیثیت متنازعہ ہے اور سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق تنازعہ کے پر امن حل کی ضرورت پر زور دیا۔

سفیر منیر اکرم نے زور دے کر کہا کہ سلامتی کونسل کشمیر کا دیرینہ تنازعہ حل کرائے جو عالمی ادارے کی ساکھ پر سوالیہ نشان بن گیا ہے۔ انہوں نے کہا بھارت نے ستر سال سے مقبوضہ وادی میں نو لاکھ فوجیوں کی تعیناتی کے ذریعے ظلم و ستم کا بازار گرم کر رکھا ہے اور اسی لاکھ کشمیری اپنے گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔

منیر اکرم نے کہا کہ آر ایس ایس کے نظریے کے زیر اثر بی جے پی کی حکومت نے بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں خود کو مسئلے کا حتمی حل قرار دیا ہے

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

عوام کو آٹے، چینی کی فراہمی اور قیمتوں کو خود مانیٹر کروں گا، وزیراعظم

Read Next

قرضوں کی ادائیگی میں سہولت کیلئے پاکستان کی مدد کریں گے، جاپانی سفیر

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے