• جنوری 28, 2022

سانحہ سیالکوٹ: ایک اور انتہائی مطلوب ملزم گرفتار

لاہور: سیالکوٹ میں پیش آنے والے انسانیت سوز واقعہ کے بعد پولیس نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے ایک اور انتہائی مطلوب ملزم امتیاز کو گرفتار کرلیا ہے۔

ترجمان پنجاب پولیس کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق سیالکوٹ کیس میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے،مرکزی ملزم امتیاز عرف بلی ہر بار اپنا ٹھکانہ تبدیل کرلیتا تھا، ملزم کو راولپنڈی جانے والی بس پر چھاپہ مار کر گرفتار کیا گیا ہے۔ملزم سری لنکن مینیجر پر تشدد کرنے اور نعش کی بے حرمتی کرنے میں شامل تھا۔

ترجمان کے مطابق دیگر ملزمان کی گرفتارکے لئے چھاپے مانے کا سلسلہ جاری ہے۔

قبل ازیں عدالت عالیہ کی جج نتاشا نسیم سپرا نے 13مرکزی ملزمان کو 15روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا ہے،ملزمان کو 21دسمبر کو دوبارہ عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

جمعہ کے پیش آنے والے ناخوشگوار واقعے کے بعد پولیس نے اب تک 8مرکزی ملزمان سمیت 132افراد کو حراست میں لیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت ملک میں امن وامان کے حوالے سے اجلاس ہوا، جس میں وزیرداخلہ شیخ رشید اور وزیراعلیٰ پنجاب سمیت اہم شخصیات نے شرکت کی۔

اجلاس میں ملک کی مجموعی امن وامان کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا، اور وزیراعظم عمران خان کو سیالکوٹ واقعہ پر بریفنگ دی گئی اور رپورٹ پیش کی گئی، جب کہ وزیر اعظم کے مشیر قومی سلامتی معید یوسف نے ارکان کو قومی سلامتی پالیسی پر بریفنگ دی ۔

وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ سانحہ سیالکوٹ نے ہمارا سر شرم سے جھکا دیا ہے، ملزمان کو قرار واقعی سزا یقینی بنائی جائے، آئندہ اس قسم کے واقعات کی روک تھام کے لیے جامع حکمت عملی بنائی جائے۔

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے سری لنکن ہائی کمیشن اسلام آباد کا دورہ کیا اور ہائی کمشنر وائس ایڈمرل موہن وجے کرما سے ملاقات کی۔

دوسری جانب وفاقی وزیر داخلہ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بتایا کہ سیالکوٹ فیکٹری حادثہ میں سری لنکا کے شہری پریانتھا کمارا کی ہلاکت پر تعزیت کا اظہار کیا اور افسوسناک واقعے پرحکومت اور پاکستانی عوام کی طرف سے افسوس اور دکھ کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ پریانتھا کماراکی افسوسناک موت پر پاکستانی عوام سوگوار ہے۔ حکومت اور پاکستانی عوام پرنتھار کماراکی ہلاکت پر خاندان کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔ سانحہ سیالکوٹ واقعے میں ملوث تمام مجرمان کو قانون کے کٹہرے میں لائینگے۔ اس واقعے میں ملوث کسی بھی شخص سے رعایت نہیں برتی جائیگی۔ ہلاکت میں ملوث تمام مجرمان کو حکومت مثالی سزا دلائے گی۔

اس موقع پر سری لنکن ہائی کمشنر نے کہا کہ پریانتھا کمارا کی ہلاکت پر حکومت اور پاکستانی عوام کے ردعمل پر بہت مطمئن ہیں، افسوسناک حادثے پر عوام کے جذبات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ پاکستان اور سری لنکا کے تعلقات انتہائی دیرینہ ہیں۔ حالیہ واقعے سے متاثر نہیں ہونگے۔ نعش سرکاری اعزاز کے ساتھ سری لنکا رخصت کرنے پر حکومت پاکستان کے مشکور ہیں۔

ادھر وزیراعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر سیالکوٹ سانحہ میں ملوث مزید ملزمان کی گرفتاری کے لئے سی سی ٹی وی فوٹیج اور موبائل کالز ڈیٹا کی مدد سے پولیس کی کارروائیاں جاری ہیں، مزید 7 مرکزی ملزمان گرفتار کرلئے گئے۔ سری لنکن منیجر پر حملے کی پلاننگ میں شامل ملزم سمیت تشدد کرنے اور اشتعال پھیلانے والے بھی دھر لئے گئے۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہنا ہے کہ اسلام امن او رسلامتی کا دین ہے، غیر ملکی شہری کو زندہ جلانا گھناؤنا فعل ہے جس پر ہر آنکھ اشکبار ہے، کسی کو یہ حق نہیں پہنچتا کہ وہ قانون ہاتھ میں لے، سیالکوٹ واقعہ میں ملوث عناصر نے پاکستان کے امیج کو بے پناہ نقصان پہنچایا ہے، بربریت کا مظاہرہ کرنے والے درندوں کو قرار واقعی سزا دلائی جائے گی۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس ہوا، جس میں سیالکوٹ واقعہ کی مذمتی قرار داد منظور کی گئی، جس میں کہا گیا کہ علما ملک میں بڑھتی ہوئی انتہا پسندی پر قابو پانے کیلئے اقدامات کریں۔ قرار داد میں سری لنکن شہری کی جان بچانے والوں کو بھی خراج تحسین پیش کیا گیا۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

ہر حلقے میں ن لیگ کیخلاف الیکشن لڑیں گے: زرداری، نواز شریف پر تنقید

Read Next

ملک بھر میں 24 گھنٹے کے دوران کورونا سے مزید 7 اموات، 232 نئے کیسز

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے