• ستمبر 20, 2021

دنیا کی پہلی اُڑنے والی موٹر سائیکل صرف دو سال کی دوری پر

لندن: برطانوی میڈیا کی طرف سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ دنیا کی پہلی اُڑنے والی موٹر سائیکل صرف دو سال میں دستیاب ہو گی۔

برطانوی اخبار ’ڈیلی سٹار‘ نے انکشاف کیا ہے کہ ذاتی استعمال کے لیے دنیا کی پہلی اڑنے والی موٹر سائیکل صرف دو سال میں دستیاب ہوگی۔

امریکی کمپنی جیٹ پیک ایوی ایشن اپنی فلائنگ بائیک دی سپائیڈر تیار کر رہی ہے تاکہ وہ 2023 تک آسمان پر اڑنے کے لیے تیار ہو جائے۔

کیلی فورنیا میں قائم کمپنی کو امید ہے کہ صارفین کے لیے اس کے دو ورژن تیار کیے جائیں گے جو باقاعدہ صارفین خرید سکتے ہیں اور چلا سکتے ہیں۔ فلائنگ بائیک فلائٹ کنٹرول سسٹم سے منسلک ہوگی، جسے تیار کرنے میں ڈیڑھ سال لگے گا۔ یہ استعمال میں آسانی کی خصوصیت رکھتی ہے، جیسا عام موٹر سائیکل کا معاملہ ہے۔ اس کے دیگر فوائد کے علاوہ خلا میں ایک مخصوص مقام پر اسے روکا بھی جا سکے گا۔

کمپنی کے سی ای او ڈیوڈ میمن نے بتایا کہ موٹر سائیکل کا پہلا ورژن دو سال کے اندر لانچ کیا جائے گا جبکہ دوسرا ورژن چھ ماہ بعد لانچ کیا جائے گا۔ بغیر پائلٹ لائسنس کے اسے چلانا ممکن ہوگا۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

کابل میں پاکستانی سفارتخانہ غیر ملکیوں کے انخلا میں مدد فراہم کر رہا ہے: منیر اکرم

Read Next

اداکارہ حبا بخاری نے جعلی اکاؤنٹس بنانے والوں کو مشورہ دیدیا

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے