• مارچ 4, 2021

داعش دوبارہ افغانستان میں زور پکڑنے لگی

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ داعش افغانستان میں دوبارہ زور پکڑنے لگی ہے۔ داعش سے منسلک گروپ آئی ایس خراسان کو گزشتہ سال، امریکی اور افغان افواج کی طرف سے سخت دباؤ کا سامنا تھا، جس میں طالبان کی جانب سے حملے بھی شامل تھے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق امریکی فوج اور انٹیلی جنس کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ آئی ایس خراسان پھر طاقت پکڑ رہی ہے اور دوبارہ حملے کرسکتی ہے۔ امریکی عہدیداروں کے مطابق افغانستان کے صوبوں ننگرہار اور کنڑ میں مسلسل شکستوں سے دوچار ہونے کے بعد اس کی نصف سے زیادہ فورس کم ہوگئی تھی، تاہم ایک سال پہلے تک اس گروپ کے وسائل کم ہوتے جا رہے تھے، تاہم اب معاملہ بظاہر اس کے برعکس ہے۔ امریکی انٹیلی جنس کے عہدیداروں کا اندازہ تھا کہ اپنے علاقے کھو دینے کے بعد آئی ایس خراسان کے پاس صرف 1000 کے قریب جنگجو باقی رہ گئے ہیں۔ تاہم اس کے باوجود اس کے حملہ کرنے کی صلاحیتوں کے بارے سوالات بڑھتے رہے ہیں۔امریکی عہدیدار نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر خبر رساں ادارے اے پی کو بتایا کہ تازہ انٹیلی جنس اندازوں کے مطابق یہ گروپ کارروائیاں کرنے کی اپنی رفتار برقرار رکھے ہوئے ہے اور شاید اس میں کابل اور دیگر شہری علاقوں پر حملے کرنے کی صلاحیت بھی برقرار ہے۔ امریکی سینٹرل کمان کے کمانڈر جنرل کینتھ فرینک مکینزی نے پیر کے روز ورچوئل فورم کو بتایا کہ داعش کی نئی قیادت نے اِسے مستحکم ہونے اور تقریباً سال 2020 کے دوسرے نصف حصے میں مقامی سطح پر حملے کرنے میں اضافےکی اجازت دی، تاہم جہاں آئی ایس خراسان کے دوبارہ سے اپنے علاقوں پر قبضہ کرنے کی صلاحیتوں کے بارے میں شکوک پائے جاتے ہیں، وہاں ایسے کوئی آثار نہیں ہیں کہ 2021 میں اس گروپ میں کوئی کمی آئے گی

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

سعودی عرب نے دہشت گردی کے الزام میں گرفتار سماجی کارکن کو رہا کر دیا

Read Next

یورپ کی 117سالہ معمر خاتون کرونا سے صحتیاب

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے