• اپریل 18, 2021

خبردار!غیرمعیاری ماسک پہننا نقصان دہ ہوسکتا ہے

سائنسدانوں کو ایسے شواہد ملے ہیں کہ کورونا وائرس کے دوران مارکیٹ میں ایسے ماسک بھی فروخت ہو رہے ہیں جن پر مضر صحت کیمیکل لگائے گئے ہیں۔ 

ابتدائی جانچ میں متعدد مرکبات کے آثار معلوم ہوئے ہیں جو صحت اور ماحولیاتی وجوہات کی بنا پر بہت حد تک محدود ہیں۔

ماسک پر ایسا کیمیکل لگایا جاتا ہے جو آنکھوں، کان اور ناک میں جلن، کھانسی اور گھبراہٹ پیدا کرتے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ غیرمعیاری فیس ماسک میں الرجنز اور کار سینوجنز جیسے زہریلے اجزا پائے گئے ہیں۔

غیرمعیاری فیس ماسک میں یہ زہریلے اجزا سانس کے راستے آپ کے جسم میں داخل ہو کر صحت کے لیے خطرہ ثابت ہوسکتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ماہرین نے عوام کو خبردار کیا ہے کہ وہ ماسک خریدتے وقت معیار کا خاص خیال رکھیں۔ 

غیرمعیاری فیس ماسک پہننے سے سانس کی بیماریاں لاحق ہوسکتی ہیں۔ اس کے علاوہ آنکھوں سے پانی بہنا اور کھانسی بھی ہوسکتی ہے۔

ماسک کو دنیا کے بیشتر ممالک میں ضروری قرار دیا گیا ہے کیونکہ وہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔

ان ماسکو میں فارملڈہائڈ اور دیگر کیمیکلز پائے گئے تھے۔ فارمایلڈہائڈ وہ کیمیکل ہے جو ماسکوں کا ایک نیا پیکٹ کھولنے پر بو دیتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ‘ہمیں فارملڈہائڈ اور یہاں تک کہ انیلائن بھی ملا ہے اور معلوم ہوا ہے کہ ماسک سے ان کیمیکلز کی ناخوشگوار کیمیائی مہک کو ختم کرنے کیلئے نامعلوم مصنوعی خوشبو کا استعمال کیا جارہا ہے۔

نیلے رنگ کے ماسک کا معائنہ کرنے پر معلوم ہوا کہ کوبالٹ کو نیلےرنگ کے طور پر استعمال کیا گیا تھا۔

کچھ تجربات کے دوران  مضر فلورو کاربن کے واضح ثبوت بھی ملے جس کے استعمال پر پابندی ہے۔ فلورو کاربن انسانی صحت کے لئے زہریلا ہے اور سائنس دانوں نے حال ہی میں اس کے غیر ضروری استعمال پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

سب وبا کے پھیلاؤ کو روکنے میں کردار ادا کریں، اسد عمر

Read Next

یکساں نصاب کا مسئلہ ایک ماہ میں حل کریں، سپریم کورٹ

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے