• ستمبر 26, 2022

حکومت کے ساڑھے تین سال عوام پر بھاری، آٹے کا 20 کلو تھیلا 393 روپے مہنگا ہوا

لاہور: پی ٹی آئی حکومت کے ساڑھے تین سال مہنگائی کے ستائے عوام پر بھاری گزرے، چینی اوسطا 33 روپے فی کلو مہنگی ہوئی، آٹے کا 20 کلو کا تھیلا 393روپے68 پیسے مہنگا ہوا۔

ادارہ شماریات کی جاری کردہ دستاویز کے مطابق موجودہ حکومت میں گھی 258 روپے 49 پیسے فی کلو مہنگا ہوا۔ اگست 2018 تا فروری 2022 دال ماش 124 روپے 86 پیسے فی کلو مہنگی ہوئی، اسی عرصے میں دال مسور 101روپے 62 پیسے فی کلو اور دال چنا 48 روپے 94 پیسے فی کلو مہنگی ہوئی۔

موجودہ دور حکومت میں بکرے کا گوشت اوسط427روپے 57 پیسے فی کلو، گائےکے گوشت کی قیمت میں219 روپے58 پیسے فی کلو اضافہ ہوا ،تازہ دودھ30 روپے17 پیسے فی لیٹر مہنگا ہوا، ساڑھے 3 سال میں دہی 31روپے44پیسے فی کلو مہنگی ہوئی۔ زندہ مرغی اوسط98روپے28 پیسے فی کلواور انڈےاوسط56 روپے95 پیسے فی درجن مہنگے ہوئے۔

پی ٹی آئی کے دور حکومت میں لہسن 268روپے43 پیسے فی کلومہنگا ہوا۔ کیلے کی قیمت میں18روپے 33پیسے فی درجن اضافہ ہوا ۔ چاول21 روپے09پیسے فی کلو مہنگے ہوئے ۔اسی عرصے میں گڑ 54روپے72 پیسے فی کلو مہنگا ہوا۔

ادارہ شماریات کے مطابق اگست 2018 تا فروری2022 ٹماٹر65روپے15پیسے فی کلو مہنگا ہوا، آلو کی قیمت اوسط3 روپے27 پیسے فی کلو بڑھی ۔ بجلی چارجز میں4 روپے93 پیسے فی یونٹ اضافہ ہواجو 2 روپے سے بڑھ کر 6.93 روپے فی یونٹ ہوگئے جبکہ ساڑھے 3 سال میں ایل پی جی کا گھریلو سلنڈر827 روپے مہنگا ہوا۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

عدم اعتماد اور لانگ مارچ، پی ٹی آئی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی آج سر جوڑ بیٹھے گی

Read Next

ڈیجیٹل دنیا میں مادری زبان کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا: عثمان بزدار

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔