• اکتوبر 29, 2020

حکومت اعلان کے باوجود خیبرپختونخوا کے آئمہ کرام 2 سال سے وظیفے سے محروم

پشاور: خیبر پختونخوا حکومت صوبے میں آئمہ کرام اور اقلیتی پیشواؤں سے کیے وعدے پورے نہ کر سکی۔ حکومتی اعلان کے باوجود صوبہ بھر میں آئمہ کرام کو دو سال سے وظیفہ نہ مل سکا۔ صوبائی حکومت نے ایبٹ آباد سمیت صوبے کے 1 ہزار 32 آئمہ جامع مساجد کو ماہانہ دس ہزار روپے وظیفہ دینے کا اعلان کیا لیکن اس کے لئے کوئی لائحہ عمل تیار نہ ہو سکا۔ آئمہ کرام نے بھی وظیفہ نہ ملنے پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ صوبائی حکومت کے مطابق آئمہ کرام کو ماہانہ وظیفہ دینے کے حوالے سے اقدامات پر کام جاری ہے، جلد ہی فراہمی بھی شروع کر دی جائیگی۔ خیال رہے کہ منصوبے کا مقصد پیش امام کو ایسا سازگار ماحول فراہم کرنا ہے جس میں وہ دین کی خدمت احسن طریقے سے کر سکیں۔ تاہم اس پر ابھی تک عملدرآمد نہیں ہو سکا ہے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

افغانستان میں قیام امن کیلئے کوششیں،انڈونیشیا کی پاکستانی کردار کی تعریف

Read Next

راولپنڈی:سابق وزیر اعظم اور ن لیگ کے قائد میاں محمد نواز شریف کی مشکلات مزید بڑھ گئیں

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے