• اکتوبر 23, 2020

جے آئی ٹی کو کراچی طیارہ حادثے کی تحقیقات سے روک دیا گیا

کراچی طیارہ حادثہ کی تحقیقات کے لیے ایف آئی اے کی سربراہی میں بنائی جانے والی مشترکہ تحقیقیاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کو  تحقیقات مکمل کرنے سے روک دیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق کراچی جہاز حادثہ کی تحقیقات کے لیے سینٹ کے احکامات پربنائی جانے والی تحقیقاتی ٹیم کو کام سے روک دیا گیا ہے اور اب کراچی طیارہ حادثے کی تحقیقات صرف سول ایوی ایشن اتھارٹی کا سیفٹی انویسٹی گیشن بورڈ ہی کرےگا۔

جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم نے کراچی طیارہ کس طرح گرا،کیا وجوہات تھیں، جہاز میں کوئی خرابی تھی، پی آئی اے طیاروں کی مینٹی ننس بروقت ہوتی تھی، جن اداروں یا اپنے ہی ادارے کے ایئر انجینئرنگ سے مدد لی جاتی تھی یا نہیں،کیا وہ قابل تھے یا نہیں، کراچی جانے والے طیارے پی کے 8303 میں پرواز سے قبل خرابی کو دور کیا گیا تھا یا نہیں، ائیر ورڈی نیس کیا کام کرتی ہے، اس نے قوانین کے مطابق جہاز کی مکمل جانچ پڑتال کی تھی یا نہیں، اس حوالے سے جے آئی ٹی نے علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیر پورٹ پر پی آئی اے اور سول ایوسی ایشن کے ملازمین سے تحقیقات شروع کر دی تھیں۔

تاہم اب ان تمام معاملات پر تحقیقات سول ایوی ایشن کا سیفٹی بورڈ خود کرے گا۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

ذی الحج کا چاند نظر آچکا ہے: فواد چوہدری اپنے مؤقف پر قائم

Read Next

سول ایوی ایشن نے مزید 28 پائلٹس کے لائسنس منسوخ کردیے

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے