• مئی 14, 2021

جس کام کی نگرانی وزیر اعظم کرتے ہیں اس کا بیڑہ غرق ہو جاتا ہے، شاہد خاقان

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ جس کام کی نگرانی وزیر اعظم کرتے ہیں اس کا بیڑہ غرق ہو جاتا ہے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ احتساب ملک کےعوام کا ہو رہا ہے۔ کیمرے لگا کر دکھایا جائے کون سا احتساب ہو رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کروڑوں کی آبادی کے لیے چند لاکھ کی ویکسین کی بات ہوئی۔ حکومت 10 کروڑ ویکسین کا آرڈر دے ا ین سی او سی کے اجلاس سے کچھ نہیں ہوتا۔ کیا این سی او سی عوام کو ماسک پہنا سکا ؟

مہنگائی سے متعلق بات کرتے ہوئے ن لیگی رہنما نے کہا کہ اپریل میں سب سے زیادہ مہنگائی ریکارڈ ہوئی جبکہ وزیر اعظم نے کہا تھا رمضان میں قیمتوں کے معاملات کی نگرانی میں خود کروں گا۔ وزیر اعظم جس کام کی نگرانی کا کہتے ہیں اس کا بیڑہ غرق ہی ہو جاتاہے۔

وزیر اعظم کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے بازاروں کا دورہ کیا۔ اشیا پڑی تھیں لیکن خریدار کوئی نہیں تھا۔ 3 سالوں میں بجلی کی قیمت میں 2 سو فیصد اضافہ ہوا ہے۔

کورونا سے متعلق شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ملک میں کورونا کیسز بڑھ رہے ہیں اور ویکسین محدود ہیں۔

انہوں نے کہا کہ چینی برآمد کی گئی جس سے بحران پیدا ہوا۔ ملک کو آئین کے مطابق چلائیں تو انتخابی اصلاحات کی ضرورت نہیں جبکہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین بنانا حکومت اور پارلیمان کا کام نہیں ہے۔ الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے کوئی مسئلہ حل نہیں ہو گا بلکہ کاغذی نظام کو مضبوط کریں۔

انہوں نے کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے مزید مسائل پیدا ہوں گے جبکہ الیکٹرانک نظام بنانا الیکشن کمیشن کا اختیار ہے۔

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ ایک سرکاری افسر کے ساتھ حکومتی عہدیداروں کا سلوک سب نے دیکھا۔ سرکاری افسر سے معافی مانگیں کیونکہ یہ آپ کے نہیں بلکہ سرکار کے ملازم ہیں۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

پنجاب حکومت نےکورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے باعث صرف 10 اضلاع کی مساجد میں اعتکاف کی اجازت دی ہے۔ کورونا کے باعث مساجد میں اعتکاف کا اہتمام محدود پیمانے پر کیا گیا ہے اور احتیاطی تدابیر کا بھی خاص خیال رکھا جا رہا ہے۔ لاہور سمیت صوبےکے 26 اضلاع میں شہریوں کو مساجد میں اعتکاف کرنے کی اجازت نہیں ہے۔ اٹک، گجرات، ساہیوال، بہاولپور، چنیوٹ، اوکاڑہ، سیالکوٹ، ڈی جی خان، حافظ آباد اور جھنگ کی مساجد میں اعتکاف کیا جا سکتا ہے۔ صوبائی حکومت نے ہدایت کی ہے کہ زیادہ شرح والے اضلاع کے شہری گھروں پر اعتکاف کریں۔ لاہور، راولپنڈی، فیصل آباد، ملتان کی مساجد میں اعتکاف کی اجازت نہیں ہے۔ یہ بھی پڑھیں: ملک بھر میں لاکھوں مسلمان اعتکاف بیٹھ گئے لاہور میں محکمہ اوقاف کے زیر اہتمام جامع مسجد داتا دربار، آسٹریلیا مسجد ریلوے اسٹیشن اور دیگر مساجد میں کسی کو اعتکاف میں بیٹھنے کی اجازت نہیں۔ وفاقی دارالحکومت سمیت ملک کے مختلف شہروں میں مساجد میں کورونا سے بچاؤ کیلئے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں۔ معتکفین کو ہدایت کی گئی کہ سب ایک ساتھ اکٹھے بیٹھ کر سحر و افطار سے گریز کریں۔ بچوں اور پچاس سال سے زائد عمر کے افراد کو مساجد نہ آنے کی ہدایت کی گئی۔ بستر، چادر، پردے اور برتن گھروں سے لے کر آنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ این سی او سی نے ہدایات میں یہ بھی کہا ہے کہ اعتکاف کرنے والے افراد کسی دوسرے فرد کی کوئی بھی چیز استعمال نہ کریں۔

Read Next

خیبرپختونخوا میں کورونا سال کی کم ترین سطح پر آگیا

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے