• اکتوبر 26, 2020

توشہ خانہ ریفرنس: آصف زرداری احتساب عدالت پیش، 9 ستمبر کو فرد جرم عائد ہوگی

اسلام آباد: احتساب عدالت نے توشہ خانہ ریفرنس میں سابق صدر آصف علی زرداری کو فرد جرم کے لیے 9 ستمبر کو طلب کرلیا۔ عدالت نے کہا آصف علی زرداری، یوسف رضا گیلانی پر 9 ستمبر کو فرد جرم عائد ہوگی۔  احتساب عدالت کے جج اصغر علی نے توشہ خانہ ریفرنس کی سماعت کی۔ سماعت کے آغاز پر عدالتی عملے نے آصف زرداری کی طلبی کے لیے ان کے وکیل فاروق ایچ نائیک کو ہدایت دی جس پر فاروق نائیک نے سابق صدر کو فون کرکے عدالت میں پیش ہونے کا کہا۔ سابق صدر کورونا سے بچاؤ کے لیے این 95 ماسک اور فیس شیلڈ لگا کر عدالت میں پیش ہوئے اور جیسے ہی وہ کمرہ عدالت میں پہنچے تو بلاول بھٹو نے پارٹی ورکرز کو عدالت سے باہر بھیج دیا۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ وکلا کے معاونین بھی باہر چلے جائیں، کورونا چل رہا ہے کچھ خیال کریں۔ بلاول کی ہدایت پر راجا پرویز اشرف، مصطفیٰ نواز کھوکھر اور پیپلزپارٹی کے دیگر رہنما کمرہ عدالت سے باہر چلے گئے۔ سماعت کے دوران وکیل صفائی اور نیب کی پراسیکیوشن ٹیم کے درمیان تلخ کلامی بھی ہوئی۔ آصف زرداری کے وکیل فاروق نائیک نے کہا کہ سابق صدر بیمار ہیں، عدالت بھری ہوئی ہے اگر ان کو کورونا ہوگیا تو کون ذمہ دار ہے؟ پہلے عدالت یہ فیصلہ کرے کہ کیا وکلا بغیر رکاوٹ عدالت میں پیش ہو سکتے ہیں؟  سابق صدر کی پیشی کے موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔ احتساب عدالت کے اردگرد کے 500 میٹر کے علاقے کو سیل کیا گیا، اسلام آباد پولیس کے ایک ہزار اہلکار سیکورٹی ڈیوٹی پر مامور کئے گئے۔ عدالت جانے والے راستے کو رکاوٹیں اور خاردار تاریں لگا کر سیل کیا گیا۔ پیپلز پارٹی کے کارکنان کو سری نگر ہائی وے پر روکا گیا، جہاں پر پیپلز پارٹی کارکنان اور پولیس کے درمیان تلخ کلامی بھی ہوئی۔

 

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

News Headlines | 12:00 PM | 17 August 2020 | A1 News

Read Next

توشہ خانہ ریفرنس: آصف زرداری احتساب عدالت پیش، 9 ستمبر کو فرد جرم عائد ہوگی

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے