• دسمبر 5, 2021

تاریخ میں یہ مشترکہ اجلاس پارلیمنٹ کو توڑنے کے مترادف سمجھا جائیگا: شیری رحمان

اسلام آباد: شیری رحمان نے کہا ہے جکہ ‏تاریخ میں یہ مشترکہ اجلاس پارلیمنٹ کو توڑنے کے مترادف سمجھا جائے گا، حکومت مانگے تانگے کی اکثریت کے ذریعے بلز بلڈوز کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

پاکستان پیپلزپارٹی کی رہنما و سینیٹر شیری رحمان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ مشترکہ اجلاس میں الیکشن ریفارمز بل نہیں بلکہ الیکشن دھاندلی بل پیش کیا جا رہا ہے، حکومت آنے والے عام انتخابات کو ابھی سے متنازع بنا رہی ہے، ای وی ایم پر الیکشن کمیشن سمیت تمام اپوزیشن جماعتوں کو اعتراضات ہیں۔

شیری رحمان کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ میں بنائی گئی مصنوعی اکثریت نے نظام کو مفلوج کر دیا ہے، اس وقت بوکھلاہٹ کی شکار وفاقی دارالحکومت کی طرف سے اپنے ہی ارکان کے بازو مروڑے جا رہے ہیں، اسلام آباد کے آرتھوپیڈک سرجنز کو چوکنا رہنا چاہئے، اپوزیشن متحد ہے اور حکومت کو شکست کا سامنا کرنا پڑے گا۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

پارلیمان آج اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ ڈالنے کا قانون پاس کر لے گی: فواد چودھری

Read Next

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں چند اراکین کی شرکت مشکوک

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے