• نومبر 29, 2021

بھارت میں انتہا پسند ہندووں کے بہیمانہ تشدد سے مسلمان شہری جاں بحق

نئی دہلی: بھارت میں مسلمان ہونا جرم بن گیا، ریاست تری پورہ میں مسلمان شہری کو بدترین تشدد کر کے شہید کر دیا گیا۔

گاؤں کمال نگر میں انتہا پسندوں نے مسلمان شہری پر گائے چوری کا الزام لگا کر پہلے گالم گلوچ اور بدتمیزی کی اور پھر بہیمانہ تشدد کر کے اس کی جان لے لی۔ بھارتی میڈیا حملہ آوروں پر تنقید کی بجائے مقتول کی کردار کشی کرتا رہا، بدترین تشدد میں جاں بحق شخص کو بنگلا دیشی اور مویشیوں کا اسمگلر بتایا جاتا رہا۔

واضح رہے کہ بھارت میں اقلیتوں خصوصا مسلمانوں کو نفرت انگیز سلوک کا نشانہ بنایا جاتا ہے، ماضی میں بھی کئی واقعات میں مسلمانوں کو بدترین تشدد کے ذریعے انتہائی ظالمانہ طریقے سے شہید کر دیا گیا۔ بھارت میں مسلمان خواتین کی عزتیں بھی محفوظ نہیں، سروں سے ڈوپٹے اور حجاب کھینچنے کے واقعات معمول میں شامل ہو گئے ہیں۔

امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مودی سرکار کے مسلمانوں کیخلاف معاندانہ رویہ سے بھارت کی عالمی ساکھ خراب ہو چکی، بھارت جنوبی ایشیا میں اپنا اثر کھو رہا ہے۔ امریکی اخبار کے مطابق بھارت میں مسلمانوں سے امتیازی سلوک سے جنوبی ایشیا میں رواداری کو نقصان پہنچا، ہمسایہ ممالک چین کو متبادل کے طور پر دیکھتے ہیں، چین نے نہ صرف پاکستان کےساتھ تعلقات کو مزید مضبوط کیا ہے جبکہ نیپال، سری لنکا اور بنگلہ دیش سے بھی بہتر تعلقات قائم کر لیے ہیں۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

ڈینگی جانیں نگلنے لگا: ملک بھر میں کیسز اور اموات میں اضافہ، مریضوں کو مشکلات

Read Next

پاکستان پیپلزپارٹی نے ایل این جی اسکینڈل کی تحقیقات کا مطالبہ کر دیا

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے