• اکتوبر 24, 2020

ایپل نے امریکا کی دیگر ٹیکنالوجی کمپنیوں کو پیچھے چھوڑ دیا

نیویارک: ڈیجیٹل الیکٹرانک کمپنی ایپل کی مارکیٹ ویلیو دو کھرب ڈالر تک پہنچ گئی۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق معروف ٹیکنالوجی ایپل کمپنی امریکا کی پہلی کمپنی بن گئی جس کی مارکیٹ ویلیو 2 کھرب ڈالر ہے۔ کرونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈاؤن کے دوران ٹیکنالوجی کمپنیوں کی پراڈکٹس کی طلب میں بھی اضافہ ہوا ہے لیکن ایپل نے پراڈکٹس کی فروخت میں تمام حریف کمپنیوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ لاک ڈاؤن میں نہ صرف ایپل فون، ٹیبلٹس اور گھڑیوں کی فروخت میں اضافہ ہوا بلکہ اس کی فراہم کردہ مختلف ایپس اور سروسز کی طلب بھی زیادہ رہی۔ بلوم برگ کی رپورٹ کے مطابق ایپل کی مارکیٹ ویلیو میں اضافے کے بعد کمپنی کے چیف ایگزیکٹو ٹیم کوک کے اثاثوں کی مجموعی مالیت بھی 1 ارب ڈالر ہوگئی ہے۔ امریکا کی دیگر ٹیکنالوجی کمپنیاں ایمازون، مائیکرو سافٹ اور گوگل ایلفابٹ کی مارکیٹ ویلیو ایک کھرب ڈالر کی ہے۔ ایپل کی جون تک کی کوارٹر رپورٹ کے مطابق کمپنی کے منافع میں 8 فیصد سے تقریباََ 11 ارب ڈالر جبکہ آمدنی میں 11 فیصد سے 159 ارب ڈالر کا اضافہ ہوا۔ ایپل کی مالیت اور اس کا اثرو روسوخ بڑھنے کے بعد خیال کیا جا رہا ہے امریکی کانگریس کی جانب سے اسے کڑی نگرانی اور تنقید کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ ماہ 29 جولائی کو ٹیکنالوجی کمپنیوں کے سربراہان کو امریکی کانگریس کے سامنے پیش ہو کر الزامات کی وضاحت کرنا پڑی تھی جن میں کہا گیا تھا کہ یہ کمپنیاں اپنی طاقت کا استعمال حریف کمپنیوں کو کچلنے کے لیے کرتی ہیں، ان میں ایمازون، گوگل، فیس بک اور ایپل کے سربراہان شامل تھے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

کیماڑی ضلع کے قیام کیخلاف عدالت جائیں گے، وسیم اختر

Read Next

تیونس کے صدر کا اسرائیل کو تسلیم کرنے سے انکار

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے