• مئی 25, 2022

اگر میرے خلاف کوئی ثبوت ہوتا تو عدالت میں پیش کیا جاتا: مریم نواز

اسلام آباد: نائب صدر نون لیگ مریم نواز نے کہا ہے کہ جج نے نیب سے بار بار ثبوت مانگے، اگر میرے خلاف کوئی ثبوت ہوتا تو عدالت میں پیش کیا جاتا، عمران خان نے سرکاری خرچ پر انتقام کے سوا کچھ نہیں کیا۔

 ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز کا کہنا تھا کہ نیب پراسیکیوٹر نے عدالت سے 4 ہفتے کی مہلت مانگی، اگر ثبوت ہوتے تو پیش کئے جاتے۔ جب آپ کے پاس ثبوت نہیں ہوں گے تو مہلت ہی مانگیں گے۔ آج نیب نے تیسرا پراسیکیوٹر تبدیل کیا ہے۔ اس کیس کو اتنا مت لٹکائیں، انصاف ہونے دیں۔ ہر پیشی پر آتی ہوں، نیب کو اتنی ڈھیل نہیں دی جانی چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ محسن بیگ جب تک آپ کے ساتھ تھے تو بہت اچھے تھے۔ محسن بیگ نےکہا تھا انہوں نے سیاسی معاملات کیلئے آپ کو ایک ارب کا فنڈ اکٹھا کر کے دیا، ہم پر بے جا تنقید ہوئی ہم نے تو کسی کو ایف آئی اے کے ذریعے نہیں اٹھوایا۔ دوسروں پر تنقید کرتے ہیں تو خود بھی حوصلہ رکھیں، ورنہ سیاست چھوڑ دیں۔ اب تو عمران خان کی ذہنی حالت پر ترس آتا ہے، ان کو وزیراعظم ہاؤس کے کسی کمرے میں بند کر دینا چاہیے۔

مریم نواز نے کہا کہ پٹرول کی قیمت میں 12 روپے کا اضافہ شرم کا مقام ہے، عوام کو سرکاری پٹرول کی سہولت میسر نہیں، دنیا کا پہلا وزیراعظم ہے جو بنی گالہ سے وزیراعظم آفس ہیلی کاپٹر پر آتا ہے۔ عمران خان نے سرکاری خرچ پر انتقام کے سوا کچھ نہیں کیا۔ ان کے جرائم کی فہرست طویل ہے، ایک ایک پائی کا حساب دینا ہو گا، آپ کو لندن نہیں بھاگنے دیں گے۔

Read Previous

Interesting News | 17 February 2022 | A1 TV

Read Next

حلیم عادل شیخ نے سینئر نائب صدر سندھ کے پارٹی عہدے سے استعفیٰ دیدیا

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔