• اکتوبر 22, 2021

اوکاڑہ میں تین ملزمان کی 18سالہ لڑکی سے مبینہ زیادتی،مقدمہ درج

اوکاڑہ: صوبہ پنجاب کے شہر اوکاڑہ میں 18سالہ لڑکی کے ساتھ تین ملزمان نے مبینہ زیادتی کی ،متاثرہ لڑکی کے والد کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا گیا۔

ذرائع کے مطابق اوکاڑہ کی بستی نور الہیٰ کی رہائشی 18 سالہ لڑکی کو تین ملزمان نے مبینہ جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جس کے بعد لڑکی کے والد محمد مشتاق کی مدعیت میں تھانہ حجرہ میں زیادتی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا۔

زیادتی کا نشانہ بننے والی 18 سالہ لڑکی انعم لاہور کے پوش علاقے ڈیفنس میں میاں خرم نامی شخص کے گھر ملازمہ ہے جبکہ وہ 25 ستمبر کو لاہور سے اپنے گھر بستی نور الہیٰ آنے کیلئے بس پر سوار ہوئی، لڑکی بس سٹینڈ قلعہ سوندھا سنگھ چوک میں بس سے اتری تو وہاں پر کھڑے موٹر سائیکل رکشہ ڈرائیور ذیشان عرف شان سے کرایہ طے کر کے سوار ہوگئی۔

رکشہ ڈرائیورمتاثرہ لڑکی کو بستی نور الہیٰ لے جانے کے بجائے کھو محمدحسین پٹواری لے گیا ،وہاں پر پہلے ہی دو نامعلوم افراد موجود تھے ،ملزم ذیشان لڑکی کو کمرے میں لے گیا جہاں پر ذیشان سمیت تینوں ملزمان نے لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔

ڈی پی او اوکاڑہ فیصل گلزار نے واقعہ پر نوٹس لیتے ہوئے ملزمان کی گرفتاری کا حکم دیا جس کے بعد تھانہ حجرہ شاہ مقیم کی پولیس ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپے ماررہی ہے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

وزیراعظم بھی ورلڈکپ سکواڈ کی سلیکشن سے ناخوش، تبدیلیاں متوقع

Read Next

کورونا کے وار مسلسل کم ہونے لگے، 24 گھنٹے کے دوران مزید 1400 افراد متاثر

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے