• اکتوبر 22, 2020

‘انہیں تو اسٹار ہی ہم نے بنایا’: یاسر حسین ترک فنکاروں کے مخالف کیوں؟

اداکار و میزبان یاسر حسین  نے  گزشتہ دنوں شہرہ آفاق ترک ڈرامہ سیریز ’ارطغرل غازی‘ کی ’حلیمہ سلطان‘ کو پاکستان کی برانڈ ایمبیسیڈر بنانے کی مخالفت کی تھی جس پر کچھ لوگوں نے ان کے مؤقف کی حمایت کی اور کچھ نے ان کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا۔

ناقدین میں عام صارفین سے لے کر  یاسر حسین کے چند شوبز انڈسٹری کے ساتھی بھی تھے جنہوں نے کہا کہ اگر بین الاقوامی اسٹار پاکستانی برانڈز کی تشہیر کرتے ہیں تو اس میں کوئی برائی نہیں۔

کئی دن گزرنے کے باوجود سوشل میڈیا پر اب تک اس بات  پر بحث جاری ہے اور یاسر حسین بھی اپنی بات پر قائم ہیں۔

یاسر حسین نے ایک بار پھر اداکارہ و ماڈل انوشے اشرف سے انسٹاگرام لائیو چیٹ میں بات کرتے ہوئے اپنے مؤقف کی وضاحت کرتے ہوئے کہاکہ اگر ہمیں اپنی انڈسٹری کو فروغ دینا ہے تو اس کے لیے کچھ اصول و ضوابط طے کرنے پڑیں گے۔

یاسر حسین نے کہا کہ لوگ جتنی بھی باتیں بنائیں انہیں برا نہیں لگتا مگر  اسی طرح دوسروں کو بھی باتیں برداشت کرنی چاہییں۔

انہوں نے کہا کہ اسرا بلجیک ‘حلیمہ سلطان’ کو تو اسٹار ہی ہم پاکستانیوں نے بنایا ہے تاہم اگر انٹرنیشنل اداکارہ کو ہی ایمبیسیڈر بنانا ہے تو ہالی وڈ اداکارہ اینجلینا جولی کو بنایا جائے تاکہ امریکا کے لوگ بھی جانیں کہ وہ پاکستان سپر لیگ کی سفیر ہیں اور اس سے ہمیں فائدہ پہنچے۔

یاسر حسین نے  مزید کہا کہ پاکستان کی بہت ساری اداکارائیں کئی سال سے محنت کر رہی ہیں مگر انہیں مواقع نہیں دیے جا رہے اور میں چاہتا ہوں کہ مقامی اداکاراؤں کو مواقع ملیں۔

بعدازاں یاسر حسین نے اسرا بلجیک کے پی ایس ایل زلمی کی فرنچائز پشاور زلمی کی ایمبیسیڈر بننے کی بھی مخالفت کی۔

یاسر حسین کا کہنا تھا کہ وہ پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کی کرکٹ ٹیم کی برانڈ ایمبیسڈر کسی مقامی اداکارہ کو دیکھنا چاہتےہیں۔

یاسر حسین سے پوچھا گیا کہ پی ایس ایل کی ٹیموں میں انٹرنیشنل کھلاڑی بھی کھیلتے ہیں تو ایک بین الاقوامی اداکارہ کو ایمبیسڈر مقرر کرنے پر اعتراض کیوں؟

اس پر یاسر حسین نے جواب دیا کہ پی ایس ایل میں جو انٹرنیشل کھلاڑی آتے ہیں، اس سے ہمارے کرکٹرز کو فائدہ پہنچتا ہے، ہمارے کرکٹرز ان سے سیکھتےہیں۔

انہوں نے کہا کہ جس طرح انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) میں انٹرنیشنل کھلاڑی جاتے ہیں تو بھارت کے مقامی کرکٹرز کو فائدہ پہنچتا ہے، اسی طرح پاکستانی برانڈز کو بھی ایسی شخصیات کو اپنا سفیر مقرر کرنا چاہیے، جن سے ہمیں کچھ فائدہ ہو۔

انوشے اشرف نے چیٹ شیئر کرتے ہوئے مداحوں سے کہا کہ بھلے مجھے اب بھی کسی انٹرنیشنل اسٹار کے ایمبیسیڈر بننے سے کوئی اعتراض نہیں لیکن ہمیں یاسر کے بھی مؤقف کا احترام کرنا چاہیے اور ان کا نظریہ بھی سمجھنا چاہیے۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں پشاور زلمی کے چیئرمین جاوید آفریدی نے بھی اسراء بلجیک کو زلمی برانڈ ایمبیسیڈر بنانے کی خواہش کا اظہا کیا تھا جس پر اداکارہ اسراء بلجیک نے بھی پشاور زلمی میں شامل ہونے کا عندیہ دے دیا ہے۔

سیریز میں مرکزی کردار ادا کرنے والے ارطغرل کی بہادری، مضبوط ایمان، حوصلہ، سب لوگوں کی مخالفت کے باوجود اپنے مقصد پر کھڑے رہنا جیسی خوبیوں نے جہاں پاکستانیوں کو اپنا گرویدہ بنایا ہوا ہے وہیں حلیمہ سلطان نے اپنی خوبصورتی کی وجہ سے پاکستانیوں کے دلوں میں گھر کر لیا ہے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

پنجاب کے چار شہروں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ

Read Next

کورونا کے مریضوں میں پروٹین سے آزمائشی علاج میں اہم پیشرفت

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے