• فروری 28, 2021

امریکی فوج میں خواجہ سراؤں پر عائد پابندی ختم

نئے امریکی صدر جو بائیڈن نے عہدہ سنبھالتے ہی امریکی فوج میں خواجہ سراؤں پر عائد پابندی کو ختم کردیا ہے۔ معروف امریکی اخبار کے مطابق نئے امریکی صدر جوبائیڈن نے انتخابی مہم کے دوران وعدہ کیا تھا کہ وہ خواجہ سراؤں پر فوج میں شمولیت سے متعلق پابندی کو ختم کردیں گے، جس کے بعد صدارتی آفس کا منصب سنبھالتے ہی بائیڈن نے ایگزیکٹو آرڈر پر دستخط کردیئے ہیں۔فوجی حکام کے مطابق نئی پالیسی کے تحت اب خواجہ سرا سروس کے دوران اپنی شناخت ظاہر کر سکیں گے اور ان کے لیے دستیاب طبی سہولیات کا معیار طے کیا جائے گا۔دوسری جانب امریکی وزیر دفاع ایش کارٹر نے کہا ہے کہ یہ ہماری لوگوں اور ہماری فورس کے لیے ایک صحیح قدم ہے۔ ایش کارٹر نے کہا کہ یہ یقینی بنایا جائے گا کہ کسی کو بھی نکلا نہیں جائے گا اور جنس کی شناخت کی بنیاد پر دوبارہ بھرتی کرنے سے انکار نہیں کیا جائے گا۔ واضح رہے کہ اس سے قبل سابق امریکی صدر براک اوباما نے فوج میں خواجہ سراؤں پر پابندی کی پالیسی کو ختم کیا تھا اور انہیں آزادانہ طور پر فوج میں نوکری کی اجازت دی تھی۔ سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک ٹوئٹ میں کہا تھا کہ خواجہ سرا فوج میں کسی بھی حیثیت میں کام نہیں کر سکتے۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے فوج میں خواجہ سراؤں پر پابندی کو دوبارہ لاگو کرنے کیلئے صدارتی حکمنامے پر دستخط کیے تھے۔

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

رابرٹ میلے کا ایران کے لیے بطور ایلچی تقرر ’دیرپا معاہدے کے لیے اہم‘

Read Next

والدہ کی لاش کو 10 سال تک فریزر میں چُھپا کر رکھنے والی خاتون گرفتار

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے