• اکتوبر 23, 2020

امریکہ میں سیاہ فام شخص پر فائرنگ کیخلاف پرتشدد مظاہرے جاری، سڑکیں میدان جنگ بن گئیں

واشنگٹن: امریکی پولیس اہلکار کی گولیوں سے شدید زخمی ہونے والے سیاہ فام کے وکیل کا کہنا ہے کہ اسے دوبارہ چلنے کے لیے معجزے کی ضرورت ہو گئی۔ کینوشا شہر میں واقعے کے خلاف پرتشدد مظاہرے جاری ہیں، پولیس کے ساتھ جھڑپوں میں متعدد افراد زخمی ہو گئے، سڑکیں میدان جنگ بن گئیں۔

امریکا میں نسلی امتیاز اور پولیس تشدد کے خلاف احتجاج تھم نہ سکا، امریکی پولیس اہلکار کی گولیوں سے شدید زخمی ہونے والے سیاہ فام کے وکلا کا کہنا ہے کہ اسے دوبارہ چلنے کے لیے معجزے کی ضرورت ہو گئی۔ ایک گولی جیکب بلیک کی ریڑھ کی ہڈی کو پار کر گئی ہے۔ 29 سالہ جیکب کی والدہ نے کہا ہے کہا اس کا بیٹا زندگی کی جنگ لڑ رہا ہے، سیاہ فام کی بہن کا کہنا تھا وہ اپنے بھائی کی نگہبان ہے۔

کینوشا شہر میں واقعے کے خلاف پرتشدد مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے، رات بھر سڑکیں میدانِ جنگ بنی رہیں، پولیس کی متشدد کارروائیوں میں متعدد افراد زخمی ہو گئے۔ ریاستی گورنر نے حالات کو کنٹرول کرنے کے لیے مزید نیشنل گارڈز طلب کر لیے ہیں، وسکونسن ریاست میں ایمرجنسی کا اعلان کر دیا گیا ہے۔

 

0 Reviews

Write a Review

Read Previous

افغانستان: مسلسل بارشوں سے ڈیمز ٹوٹ گئے، سیلابی ریلے میں 77 افراد بہہ گئے

Read Next

کرائسٹ چرچ سانحے کے دہشت گرد کو سزا دینے کیلئے نیوزی لینڈ میں سماعت جاری

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے